سی ٹی ڈی کی کورنگی میں کارروائی ،ایم کیو ایم لندن کے 5 خطرناک ٹارگٹ کلر زگرفتار ،ایک پولیس اہلکار بھی شامل،بھاری تعداد میں اسلحہ برآمد

سی ٹی ڈی کی کورنگی میں کارروائی ،ایم کیو ایم لندن کے 5 خطرناک ٹارگٹ کلر ...
سی ٹی ڈی کی کورنگی میں کارروائی ،ایم کیو ایم لندن کے 5 خطرناک ٹارگٹ کلر زگرفتار ،ایک پولیس اہلکار بھی شامل،بھاری تعداد میں اسلحہ برآمد

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)کاؤنٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ آپریشن ون نے کورنگی میں کارروائی کرتے ہوئے متحد ہ قومی موومنٹ لندن کے پانچ خطرناک ٹارگٹ کلروں کو گرفتار کرکے انکے قبضے سے بھاری تعداد میں اسلحہ برآمد کرلیا، گرفتار ہونے والے ٹارگٹ کلرز میں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے، ٹارگٹ کلرز نے دوران تفتیش پولیس اہلکاروں ، مہاجر قومی موومنٹ اور اپنی ہی تنظیم کے کارکنان سمیت 21سے زائد افراد کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے ،ٹارگٹ کلرز نے 1992 میں ہونے والے آپریشن میں حصہ لینے والے پولیس افسر کو بھی قتل کیا تھا۔ایس ایس پی سی ٹی ڈی کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم کے دور میں بھرتی ہونے والے تمام پولیس اہلکاروں کی جانچ پڑتال کی جائی گی۔

نجی چینل مسلسل جھوٹ کا سہارا لے رہا ہے، پیمرا کی جانب سے کوئی ایکشن نہیں کیا جارہا: مریم نواز

ایس ایس پی سی ڈی ٹی منیر شیخ نے کراچی میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ متحدہ قومی موومنٹ لندن کے ساؤتھ افریقہ سیٹ اپ کے دہشت گرد جہانگیر بابو، آغا عدیل ، رضوان قریشی اور کاشف صدیقی کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے احکامات دیتے تھے ، گرفتار ہونے والے ٹارگٹ کلرزمیں محمد رضوان خان عرف خان صاحب ، محمد کامران عرف منا، فہیم لودھی ، محمد کامران عرف مولانا اور عدنان شیخ شامل ہیں ، محمد رضوان خان عرف خان صاحب پولیس کانسٹیبل ہے اور متحدہ قومی موومنٹ کی سفارش پر پولیس میں بھرتی ہوا اور ایم کیو ایم لندن کے ساؤتھ افریقہ سیٹ اپ کیلئے کام کرتا ہے ۔ ایس ایس پی نے مزید بتایا کہ گرفتار ہونے والے ٹارگٹ کلرز نے دوران تفتیش بتایا کہ سال 2015 میں زمان ٹاؤن تھانے کی حدود میں پولیس موبائل پر فائرنگ کی جس میں پولیس کے چار جوان اے ایس آئی عقیل ، کانسٹیبل اختر، کانسٹیبل جمیل اور کانسٹیبل انوار شہید ہوئے تھے ، سال 2009 میں کورنگی نمبر 5 میں 1992 میں آپریشن لینے والے اے ایس آئی حاجی ندیم کو فائرنگ کرکے قتل کیا ، سال 2011 میں دانش سی آئی ڈی والے پر قاتلانہ حملہ کیا جس میں دانش شدید زخمی ہوا تھا ، ٹارگٹ کلرز نے بتایا کہ کورنگی نمبر 6 جلیبی چوک پر فائرنگ کرکے متحدہ قومی موومنٹ حقیقی کے کارکن فرقان عرف ڈبہ کو قتل کیا، کورنگی نمبر 6جلیبی چوک پر فائرنگ کرکے مہاجر قومی موومنٹ کے کارکن ننھا کو قتل کیا، متحدہ قومی موومنٹ کے کارکن عامر پنڈت کو پولیس مخبر ہونے کے شبہ پر قتل کیا ، سال 2008 میں مہاجر قومی موومنٹ حقیقی کے کارکن شاہ نواز کو کورنگی گراؤنڈ میں کرکٹ کھیلتے ہوئے قتل کیا ، سال 2009 میں لانڈھی نمبر 6 میں فائرنگ کرکے مہاجر قومی موومنٹ کے کارکن عمران عرف ایمی کو قتل کیا ، سال 2009 میں غوثیہ پاک کالونی سیکٹر 50 اے میں فائرنگ کرکے دو بنگالی جمال اور زاہد کو قتل کیا، سال 2012 میں کورنگی سیکٹر 51 سی میں فائرنگ کرکے عوامی نیشنل پارٹی کے دو کارکن حضرت خان اور دوست محمد کو قتل کیا، کورنگی میں فائرنگ کرکے متحدہ قومی موومنٹ کے کارکن سلطان کپل کو قتل کیا ، سال 2003 میں کورنگی نمبر پانچ میں مہاجر قومی موومنٹ کے کارکن احسان عزیز کو قتل کیا، سال 2004 میں گلشن اقبال بیکری کے قریب فائرنگ کرکے عمران عرف خان صاحب کو قتل کیا،کورنگی ڈیڑھ نمبر پر فوٹو سٹیٹ کی دکان کے قریب فائرنگ کرکے متحدہ قومی موومنٹ لندن کے سیکٹر انچارج طارق عرف سیکٹر والے کو قتل کیا ، سال 2007 میں کورنگی نمبر 2 پر بھتہ نہ دینے پر خان سٹے والے کا قتل کیا، سال 2006 میں 100 کوارٹر کے قریب فائرنگ کرکے چچا غفار کو قتل کیا چچا غفار مہاجر قومی موومنٹ حقیقی کا کارکن تھا ، سال 2006 میں 100 کوارٹر کے قریب فائرنگ کرکے مہاجر قومی موومنٹ کے کارکن مرتضی کو قتل کیا، سال 2009 میں لانڈھی نمبر 6 فرنیچر مارکیٹ کے قریب فائرنگ کرکے مہاجر قوی موومنٹ کے کارکن اسرار خان کو قتل کیا، سال 2010 میں ناصر کالونی میں فائرنگ کرکے متحدہ قومی موومنٹ کے کارکن عامر کو قتل کیا ، سال 2007 میں کورنگی نمبر 6 میں فائرنگ کرکے مہاجر قومی موومنٹ کے کارکن زاہد کو قتل کیا، ٹارگٹ کلرز نے 12 مئی کو فائرنگ کرنے کا بھی اعتراف کیا ہے ،مزید تفتیش کی جارہی ہے۔

مزید :

کراچی -