چھریوں کے وار سے زخمی ہونے والی نوجوان لڑکی خدیجہ تو آپ کو یاد ہوں گی اب بھری عدالت میں ان کے ساتھ ایسا شرمناک کام کر دیا گیا کہ جان کر ہر پاکستانی شرم سے پانی پانی ہو جائے

چھریوں کے وار سے زخمی ہونے والی نوجوان لڑکی خدیجہ تو آپ کو یاد ہوں گی اب بھری ...
چھریوں کے وار سے زخمی ہونے والی نوجوان لڑکی خدیجہ تو آپ کو یاد ہوں گی اب بھری عدالت میں ان کے ساتھ ایسا شرمناک کام کر دیا گیا کہ جان کر ہر پاکستانی شرم سے پانی پانی ہو جائے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )لاہور کے علاقے ڈیو س روڈ پر 21سالہ نوجوان لڑکی خدیجہ کو ملزم شاہ حسین نے چھریوں کے وار کر کے زخمی کر دیا تھا تاہم اس کا کیس تاحال عدالت میں چل رہاہے اور مخالفین نے اپنی نا م نہاد ’عزت ‘بچانے کیلئے معصوم لڑکی کیخلاف انتہائی شرمناک ہتھکنڈے استعمال کرنے شروع کر دیئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق آج عدالت میں خدیجہ حملہ کیس کی سماعت ہوئی جس دوران ملزم حسین شاہ اور خدیجہ عدالت میں موجود تھیں ،شاہ حسین کوئی قانونی جواز پیش نہ کر سکے تو انہوں نے اپنے آپ کو سزا سے بچانے کیلئے انتہائی اوچھی حرکتیں شر وع کر دی ہیں ،مخالف پارٹی نے آج عدالت میں خدیجہ کی ملزم شاہ حسین کے ساتھ بنائی گئی ایسی تصاویر دکھائی  جو کہ 2014میں بنائی گئیں تھیں اور یہ حملے سے قبل ان کی دوستی کے دورانیے میں بنائی گئیں لیکن ان تصاویر کا میرٹ آف کیس سے مبینہ طور پر کوئی تعلق نہیں تھا لیکن پھر بھی انہیں کمرہ عدالت میں چلایا گیا اور خدیجہ کو دماغی طور پر ٹارچر اور حراساں کرنے کیلئے استعمال کیا گیاجبکہ بھری عدالت میں نوجوان لڑکی کو بلیک میل بھی کیا گیا ۔ذرائع کا کہناہے کہ خدیجہ بالکل بھی مفاہمت کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور ان کا موقف ہے کہ ٹرائل چلنا چاہیے جس پر انہیں دھمکیاں دی جارہی ہیں لیکن وہ پھر بھی سچ کے ساتھ کھڑی ہیں ۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خدیجہ کے وکیل کا کہناتھا کہ خدیجہ سچ کے ساتھ کھڑی رہیں ،مخالفین کو شرم آنی چاہیے کہ خدیجہ ایک بیٹی ہیں ،مجھے آج رونا آ رہاہے جو کچھ عدالت میں کیا گیا ،جس نے جج صاحب کو بھی ہلا کر رکھ دیا ۔

مزید :

قومی -