اسلام آبادچیمبرکے وفد کا انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی کا دورہ

اسلام آبادچیمبرکے وفد کا انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی کا دورہ

اسلام آباد (این این آئی) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد نوید ملک کی قیادت میں ایک وفد نے انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی اسلام آباد کا دورہ کیا اور ادارے کے وائس چانسلر عمران رحمان سے اکیڈیمیا انڈسٹری روابط کو بہتر کرنے کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ عاشر حفیظ، محمد فہیم خان، دلدار عباسی اور خالد چوہدری وفد میں شامل تھے۔ انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی کے آفس آف ریسرچ، انوویشن اینڈ کمیونیکیشن کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ظفر ایم خان اور کنسلٹنٹ ڈاکٹر ظہور سرور بھی اس موقع پر موجود تھے۔ اس موقع پر انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی کے فائنل سال کے طلبا نے اپنے پراجیکٹس وفد کے سامنے پیش کئے اور وفد نے طلبا کو ان پراجیکٹس کو کمرشلائزکرنے کیلئے مختلف پیشہ وارانہ مشورے دیئے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبرآف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد نوید ملک نے کہا کہ ترقی یافتہ دنیا نے اکیڈیمیا انڈسٹری روابط مضبوط کر کے پائیدار اقتصاد ی ترقی حاصل کی ہے ہمیں بھی اپنی معیشت کو مضبوط بنانے یونیورسٹیوں اور انڈسٹری کے درمیان قریبی روابط کو فروغ دینا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ یونیورسٹیوں کے پاس جدید علم اور معلومات ہوتی ہیں اور وہ مختلف شعبوں میں تحقیق و ترقی کی سرگرمیوں میں مصروف ہوتی ہیں لہذا یونیورسٹیاں صنعتی شعبہ کو درپیش مسائل حل کرنے میں بھرپور تعاون کریں۔ انہوں نے طلبا پر زور دیا کہ وہ اپلائیڈ ریسرچ کی طرف زیادہ توجہ دیں جو صنعتی شعبے کے مسائل حل کرنے میں معاون ثابت ہوگی۔ انہوں نے یونیورسٹیوں پر بھی زور دیا کہ وہ طلبا کو اپلائیڈ ریسرچ کے زیادہ مواقع فراہم کریں جس سے معاشرے کے اہم مسائل کو حل کرنے کی طرف مثبت پیش رفت ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی ساٹھ فیصد سے زائد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے اور ہر سال ہزاروں نوجوان جاب مارکیٹ میں داخل ہو رہے ہیں لیکن پبلک و پرائیویٹ شعبوں میں اتنی گنجائش نہیں ہے کو سب کو ملازمتیں فرام کی جا سکیں۔ لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ یونیورسٹیاں طلبا میں انٹرپرنیورشپ کلچر کو فروغ دینے کی طرف زیادہ توجہ دیں تا کہ طلبا نوکریوں کے پیچھے بھاگنے کی بجائے اپنا کاروبار شروع کرنے کو ترجیح دیں جس سے وہ نہ صرف خود معاشی طور پر خود کفیل ہوں گے بلکہ دوسروں کیلئے بھی روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے کے قابل ہوں گے۔ انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی کے وائس چانسلر عمران رحمٰن نے وفد سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹیاں صنعتی شعبے کو اپنی پیداواری استعداد کار بہتر کرنے میں ضروری تعاون فراہم کر سکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹیوں میں باقاعدہ ریسرچ کے شعبے قائم ہیں جو بہت سے شعبوں میں ریسرچ کا کام کرتے رہتے ہیں تاہم قریبی روابط نہ ہونے کی وجہ سے صنعتی شعبہ یونیورسٹیوں کی ریسرچ سے بہتر استفادہ حاصل نہیں کر پا رہا۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی شعبہ اپنے مسائل کو یونیورسٹیوں کو آگاہ کرے تا کہ ان کے حل کیلئے کوششیں تیز کی جا سکیں۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ چیمبر کا تعاون اکیڈیمیا انڈسٹری روابط کو بہتر کرنے میں معاون ثابت ہوگا ۔ اس موقع پر طلبا نے تاجر برادری سے کاروبار کے میدان میں کامیابی حاصل کرنے کیلئے مختلف سوالات کئے جن کے ان کو تفصیلی جوابات دیئے گے۔

مزید : کامرس