انتخابی عملہ کی مراعات میں 23کروڑ 88لاکھ اضافہ

انتخابی عملہ کی مراعات میں 23کروڑ 88لاکھ اضافہ

اسلا م آباد(ایجنسیاں) الیکشن کمیشن پاکستان ( ای سی پی ) نے عام انتخابات میں فرائض انجام دینے والے انتخابی عملے، پریذائڈنگ افسروں کی مراعات میں اضافہ کردیا۔ پریذائیڈئنگ افسران اپنے موبائل سے انتخابی نتائج کی تصاویر بھیج کر ایک ہزار ہزار روپے حاصل کرسکیں گے، اس طرح صرف ایک کلک پر 85 ہزار پریذائڈنگ افسران میں 8 کروڑ 50 لاکھ روپے تقسیم کیے جائیں گے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پریذائڈنگ افسران کو اعزازیہ اور دیگر سہولیات کے علاوہ ایک ہزار روپے ملیں گے۔اس کے علاوہ الیکشن کمیشن کی جانب سے پریذائڈنگ افسران کا اعزازیہ بھی بڑھایا گیا ہے اور اسے 3200 سے بڑھا کر 6 ہزار روپے کردیا گیا ہے۔اعزازیے کی رقم بڑھانے سے الیکشن کمیشن کو 23 کروڑ 88 لاکھ روپے کا اضافی بوجھ برداشت کرنا پڑے گا۔ دریں اثناء الیکشن کمیشن آف پاکستان میں انتخابی نتائج جاری کرنے سے متعلق ملک بھر کے ریٹرنگ افسران کو ہدایت نامہ ارسال کردیا ہے الیکشن کمیشن میں تمام آروز کو مراسلے بجھواتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ پریذائیڈنگ افسران ووٹوں کی گنتی کی بعد فوری طور پر فارم 45تیار کریں گے جس میں امیدواروں کو پڑنے والے ووٹوں کی تفصیلات درج ہوگی اور بچ جانے والے بیلٹ پیپر کی تفصیلات فارم 46میں درج کی جائیں گی ووٹوں کی گنتی مکمل ہونے پر نتائج کی تصدیق شدہ کاپی امیدواروں کو موقع پر جاری کرنے کی ہدایت کی گئی ہے اور نتائج کی کاپی وہاں موجود پولنگ ایجنٹ کو بھی دی جاسکتی ہے ہدایت نامہ میں مزید کہا گیا کہ نتائج کی تیاری کے بعد پرزائیڈنگ افسیر تمام انتخابی مواد پیکٹ میں بند کرکے آرو کو بھیجنے کا پابند ہوگا اور نتائج کی تیاری کیلئے پرزائیڈنگ افیسر امیدواروں اور ان کے ایجنٹ کو تحریری نوٹس جاری کرکے مقام اور وقت کا تعین کرے گا اور پریذائیڈنگ افیسر کوسٹل بیلٹ کی تفصیلات بھی شامل کرے گا اور افسران کو بھیجے گئے نتائج امیدواروں اور ان کے ایجنٹس کی موجودگی میں جمع کرائے جائیں گے اور یہ عمل پولنگ دن کے خاتمے کے بعد بلاتاخیر شروع کیا جائیگا الیکشن کمیشن نے اپنے ہدایت نامے میں یہ بھی کہا ہے کہ آروز نتائج کی تیاری سے قبل گنتی سے بچ جانے والے بیلٹ پیپر کا جائزہ لے کر متلعق حکام کو بتانے کے بھی پابند ہوگے ۔مزید برآں الیکشن کمیشن نے اختیارات کے ناجائز استعمال سے متعلق درخواست پر ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ پنجاب بابر بخت قریشی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 17جولائی کو طلب کر لیا۔جمعرات کو الیکشن کمیشن میں ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ پنجاب بابر بخت قریشی کے خلاف اختیارات کے ناجائز استعمال سے متعلق درخواست کی سماعت ممبر سندھ عبدالغفار سومرو کی سربراہی میں تین رکنی کمیشن نے کی۔دریں اثناء الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فیس بک کی خدمات لینے سے انکار کرتے ہوئے فیس بک انتظامیہ کی جانب سے کی گئی پیشکش کو مسترد کردیا ہے ، الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ یہ ایک حساس معاملہ یہ جو کہ الیکشن کے نتائج پر بری طرح اثر انداز ہوسکتا ہے اس لئے ہم سوشل میڈیا پر بھروسا نہیں کرسکتے۔ فیس بک انتظامیہ کی جانب سے الیکشن کمیشن کا آفیشل پیج بنانے کی آفر کی گئی تھی جس پر الیکشن کمیشن نے انکار کرتے ہوئے اس آفر کو مسترد کردیا۔

الیکشن کمیشن

مزید : کراچی صفحہ اول