لطیف کپاڈیا ویلفیئرٹرسٹ کاہنر فاؤنڈیشن کے ساتھ تعاون

لطیف کپاڈیا ویلفیئرٹرسٹ کاہنر فاؤنڈیشن کے ساتھ تعاون

کراچی(پ ر) لطیف کپاڈیا میموریل ویلفیئر ٹرسٹ بیماریوں ،اوربالخصوص ’گٹکے ‘سے پیدا ہونے والی بیماریوں، کے خلاف تحفظ کی آگہی مہم میں ہنر فاؤنڈیشن کے ساتھ تعاون جاری رکھے گا۔ ٹرسٹ معاشرے میں صحت کے مختلف مسائل اور بالخصوص گٹکا، چھالیا اور تمباکو س بننے والی دیگراشیاء کے ستعمال سے پیدا ہونے والے مسائل کے بارے میں پہلے بھی آگاہی کو فروغ دیتا رہاہے اور اس سلسلے میں ان کے ساتھ اس کا تعاون جاری رہے گا تاکہ معاشرے میں بیماریوں کے خلاف تحفظ اور احتیاطی تدابیرکے بارے میں آگاہی کو فروغ دیا جا سکے۔اس تعاون کے سلسلے میں ،کراچی میں واقع،اس انسٹی ٹیوٹ میں’گٹکے کا خاتمہ‘ کے عنوان سے ایک ایونٹ منعقد ہوا جس کا بنیادی مقصد طلبا ء کو گٹکے اور چھالیہ کھانے کے نقصان دہ اثرات اور ضروری احتیاطی تدابیرسے آگاہ کرنا تھا تاکہ گٹکا کھانے کی لت سے نجات یقینی بنائی جا سکے۔اس ورکشاپ میں لطیف کپاڈیا میموریل ویلفیئرٹرسٹ کے بورڈ کی اعزازی رکن، ڈاکٹر دیناز گاندھی نے بھی شرکت کی۔ ڈاکٹر گاندھی التمش انسٹی ٹیوٹ میں ایسو سی ایٹ پروفیسر اور آغا خان یونیورسٹی ہسپتال میں کنسلٹنٹ اورل اینڈ میکسلوفیشل سرجن ) (Oral and Maxillofacial surgeon بھی ہیں۔ان کے علاوہ ٹرسٹ کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر، محترمہ نعیمہ کپاڈیا ، فرمان خان اور ارسلان خان نے بھی ورکشاپ میں شرکت کی۔ایونٹ میں التمش انسٹی ٹیوٹ آف ڈینٹل میڈیسن کے جونیئر ڈاکٹر بھی موجود تھے جنہوں نے خصوصی طور پر لگائے گئے اسکریننگ کیمپوں میں 100سے زائد طلبا ،اور دہلی مرکنٹائل سوسائٹی ٹیکنکل انسٹی ٹیوٹ کے عملے کا بھی معائنہ کیا۔ایونٹ کے بارے میں موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ٹرسٹ کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر، نعیمہ کپاڈیا نے کہا،’’ہم دی ہنر فاؤنڈیشن کے ساتھ جاری تعاون پر بہت خوش ہیں اور اس پلیٹ فارم سے لوگوں کو صحت کے بارے میں آگاہی فراہم کر رہے ہیں۔ اس طرح طلبا ء جہاں پیشہ ورانہ صلاحیتوں کے اعتبار سے مضبوط ہوں گے وہیں صحتمند بھی ہوں گے۔گٹکے کے خاتمے کی مہم کا بنیادی مقصد تمباکو کے استعمال سے ہونے والے نقصانات سے تحفظ بھی تھا۔ یہ بات بہت اہم ہے کہ ہمارے ملک کا مستقبل صحت مند ہو کیوں کہ ایک صحت مند دماغ ہی ترقی پسند دماغ ہوتاہے۔ ہم اس ایونٹ میں شرکت کے لیے التمش انسٹی ٹیوٹ آف ڈینٹل میڈیسن کے بھی شکرگزار ہیں ۔‘‘اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ڈاکٹر دیناز گاندھی نے کہا،’’آج کا یہ ایونٹ تمباکو ،پان اور چھالیہ کے نقصانات اور دہنی صحت کے موضوع پر گزشتہ ہفتے دئیے گئے لیکچر اور بات چیت کے تسلسل میں ہے۔ ہم تمام طلباء کے لیے ایک اسکریننگ میڈیکل کیمپ لگا رہے ہیں تاکہ مذکورہ نقصان دہ اشیاء استعمال کرنے والے طلباء کے بارے میں معلوم کر سکیں۔ اس طرح انہیں سرطان سے پہلے بننے والے زخموں یا اورل سب میوکس فائبروسس (Oral Submucous Fibrosis; OSF)کی علامتوں کے بارے میں آگاہ کرنے میں مدد ملے گی۔ اس سے ایسے افراد کی شناخت میں بھی مدد ملے گی جنہیں مزید طبی مدد کی ضرورت ہے۔‘‘

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر