تحریک انصاف سیاسی یتیم خانے سے واشنگ مشین مین تبدیل ہو گئی :سراج الحق

تحریک انصاف سیاسی یتیم خانے سے واشنگ مشین مین تبدیل ہو گئی :سراج الحق

سیالکوٹ/گوجرانوالہ/وزیرآباد (بیورو رپورٹ، آن لائن) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ متحدہ مجلس عمل ایک نظریاتی کارواں ہے جو ملک میں خاندانوں کا نہیں اسلام کا نفاذ چاہتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سیالکوٹ میں کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ اس ملک پر ستر سالوں سے جاگیر داروں اور وڈیروں نے حکومت کی ۔ الیکشن کمیشن کا کردار غیر جانبدارانہ اور منصفانہ ہونا چاہیے۔قلعہ دیدار سنگھ میں متحدہ مجلس عمل کے نامزد امیدوارحلقہ پی پی 62 بلا ل قدرت بٹ کے انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ 25 جولائی کو قوم نے فیصلہ کرناہے کہ وہ محمد ؐ کے غلاموں کے ساتھ یا سیکولر اور لبرل ازم کے پیروکاروں کے ساتھ ہے۔ جلسہ سے مرکزی رہنماء جمعیت علماء اسلام (ف) امجد خاں ،صدر متحدہ مجلس عمل پنجاب میاں مقصود احمد ، پیر سید معین الدین محبوب کوریجہ بلال قدرت بٹ ، و دیگر نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پرامیدواران این اے 80 ڈاکڑ عبید اللہ گوہر این اے 81 حافظ حمید الدین اعوان،این اے 82 فرقان عزیز بٹ ،امیدوران ر صوبائی اسمبلی پی پی53 خرم سلیم کھو کھر ،پی پی57 مشتاق ابراہیم انصاری ،ضلعی صدر متحدہ مجلس عمل مظہر اقبال رندھاوا ،ضلعی نائب امیر جماعت اسلامی محمد سلیم بٹ ،عمر فاروق گیلانی ،میاں محمد یوسفِ بھی موجود تھے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ پی ٹی آئی سیاسی یتیم خانہ ہے اور اب واشنگ مشین بن گئی ہے ۔ کل تک جنہوں نے پیپلز پارٹی اور نون لیگ کی حکومتوں میں رہ کر پاکستان کو لوٹا ، وہ اب پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈرز ہیں ۔ سراج الحق نے کہاکہ مجھے نگران حکومت اور میڈیا سے بھی گلہ ہے کہ وہ ان لوگوں کو اہمیت دیتے ہیں جنہوں نے قوم کے اربوں کھربوں روپے لوٹے ۔ الیکشن کمیشن بھی ان لوگوں کے خلاف کوئی ایکشن لینے کو تیار نہیں جو کروڑوں اور اربوں خرچ کر کے الیکشن کو دولت کا کھیل بنارہے ہیں جبکہ احتساب عدالتیں بھی احتساب میں ناکام رہیں ۔ پی پی 51میں ایم ایم اے کے امیدوار محمد مشتاق بٹ کی انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکمران اپنی ڈیوٹی سے غافل ہیں کیونکہ امن و امان کی صورت حال اچھی نہیں ، دشمن آ زاد ہے جو عوام، ملک ، جمہوریت اور شہریوں پر حملہ آور ہے اور جنہوں نے ہارون بلور کو شہید کر دیا،حکومت بیانات کی بجائے کار کردگی کا مظاہرہ کرے۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ایم ایم اے میں کوئی نیب زدہ، پاناما لیکس یا آف شور کمپنیاں بنانے والا نہیں جبکہ ایم ایم اے کادور حکومت سیکولر نہیں بلکہ قرآنی ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ آج تک ذاتی ایجنڈا پرکام کرنے والوں نے ملک پر حکمرانی کی ہے اور قومی مقاصد کر نظر انداز کیاہے۔ ملک کو ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کی بیڑیاں پہنائی ہیں ۔ہر پاکستانی کو مقروض کر دیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ انتخابات 2018نظریات کاالیکشن ہے اورنظریات اور اصول قربانی کا تقاضا کرتے ہیں لہٰذا25جولائی کا دن تعین کر ے گا کہ ملک نے کس طرف جانا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر