زرداری،فریال کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم نہیں دیا گیا: نائیک،اعتزاز

زرداری،فریال کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم نہیں دیا گیا: نائیک،اعتزاز

اسلام آباد (آئی این پی)سابق صدر آصف علی زرداری کے وکلاء فاروق ایچ نائیک اور اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ چیف جسٹس جو حکم جاری کریں گے قبول ہوگا‘ عدالت نے صاف کہہ دیا ہے کہ آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل پر نہیں ڈالے جاسکتے۔ سپریم کورٹ نے آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم نہیں دیا تھا، میڈیا نے عدالتی فیصلے کی غلط تشریح کرکے آصف زرداری اور فریال تالپور کے نام ای سی ایل میں ڈالنے سے متعلق غلط خبریں چلائیں چیف جسٹس پاکستان نے اپنے فیصلے کی وضاحت کردی۔ فاروق ایچ نائیک نے جمعرات کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ تمام واقعات صرف پاکستان پیپلز پارٹی کو بدنام کرنے کے لئے کئے جارہے ہیں پاکستان پیپلز پارٹی کی ہی جیت ہوگی آصف زرداری کا زرداری گروپ کمپنی سے کوئی تعلق نہیں۔ چیف جسٹس جو حکم جاری کریں گے قبول ہوگا جو بھی عدالتی کارروائی ہوئی شفاف ہوئی عدالت نے صاف کہہ دیا ہے کہ آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل پر نہیں ڈالے جاسکتے۔ ایف آئی آر میں آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام نہیں ہے۔ پیرا گراف چار کے ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا کہا گیا تھا۔ سپریم کورٹ نہیں چاہتی شفاف الیکشن پر کوئی سوال اٹھے۔ عدالت کے تمام سوالوں کے جواب دینے کے لئے تیار ہیں پتہ کرنا ہے ڈیڑھ کروڑ روپے کس نے اکاؤنٹ میں ڈالے پیپلز پارتی کو بدنام کرنے کے لئے یہ سب ہورہا ہے۔دریں اثناء کم و بیش یہی باتیں اعتزاز احسن نے بھی گزشتہ روز سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہیں ، انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نے آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم نہیں دیا تھا۔ میڈیا نے عدالتی فیصلے کی غلط تشریح کرکے آصف زرداری اور فریال تالپور کے نام ای سی ایل میں ڈالنے سے متعلق غلط خبریں چلائیں۔ چیف جسٹس نے اپنے فیصلے کی وضاحت کردی الیکشن پچیس جولائی کو ہوتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

نائیک، اعتزاز

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر