طلباء کے حقوق کے حصول کیلئے کوشاں ہیں ،سہیل معبود

طلباء کے حقوق کے حصول کیلئے کوشاں ہیں ،سہیل معبود

چارسدہ(بیور و رپورٹ) طلبہ کے حقوق کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ۔ایمنسٹی انٹرنیشنل اور ہیومن رائٹس تنظیمیں جامعہ پشاور کے طلبہ پر تشدد کا نوٹس لے۔طلباء کے کمروں کو سراغ رسا کتوں کے ذریعے چیک کیا گیا جس سے ایک طرف جامعہ کا تقدس پامال ہوا جبکہ دوسر ی طرف انسانی اقدار کو بھی پامال کیا گیا ۔ سہیل معبود ۔ تفصیلات کے مطابق متحدہ طلبہ محاذ جامعہ پشاور کے جنر ل سیکرٹری سہیل معبود نے کہا ہے کہ جامعہ پشاور کے طلبہ کے حقوق کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ جیلوں اور پولیس تشدد سے طلبہ کی آواز کو نہیں دبایا جاسکتا۔ انھوں نے طلبہ پر پولیس تشدد اور پوری رات وین میں حبس بے جا میں رکھنے کی شدید مذمت کر تے ہوئے گورنر ، وزیر اعلی ، چیف جسٹس ،ہیومن رائٹس اور ایمنسٹی انٹرنیشنل سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ۔ انھوں نے کہا کہ پشاور یونیورسٹی کی انتظامیہ پرامن ماحول کو خراب کر نا چاہتی ہے اور ان طلبہ کو رستے سے ہٹانا چاہتی ہے جو یونیورسٹی میں مختلف قسم کی بدعنوانیوں اور بے قاعدگیوں کو بے نقاب کر رہے ہیں۔ یونیورسٹی انتظامیہ طلبہ کے ہاتھوں سے قلم اور کتاب چھین کر ان کو دہشت گردی کی طرف دھکیلنا چاہتی ہے۔ؔ ؔ ؔ انھوں نے کہا کہ یونیورسٹی انتظامیہ کافی عرصے سے طلبہ کو ہراساں کر ہے ہیں اس سے پہلے بھی اینٹی نارکوٹکس فور س کی مدد سے یونیورسٹی انتظامیہ نے غیر قانونی طور پر طالب علموں کے کمروں صبح پانچ بجے چھاپہ مارا اور طلبہ کو ہراساں کیا، طالب علموں کے کمروں کو سراغ رساں کتوں کے ذریعے چیک کرایا گیا جس سے جامعہ کے تقدس کی پامالی ہوئی لیکن ان کے دعووں کے برعکس کمروں سے غیر قانونی مواد کچھ بھی برآمد نہ ہوا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر