’’جب میری حکومت بن جائے گی تو میں ٹیریان کو۔۔۔‘‘ عمران خان اپنی مبینہ بیٹی ٹیریان کے بارے میں کیا کہتے تھے؟ ریحام خان نے انتہائی حیران کن دعویٰ کر دیا

’’جب میری حکومت بن جائے گی تو میں ٹیریان کو۔۔۔‘‘ عمران خان اپنی مبینہ بیٹی ...
’’جب میری حکومت بن جائے گی تو میں ٹیریان کو۔۔۔‘‘ عمران خان اپنی مبینہ بیٹی ٹیریان کے بارے میں کیا کہتے تھے؟ ریحام خان نے انتہائی حیران کن دعویٰ کر دیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ریحام خان کی تہلکہ خیز کتاب بالآخر منظرعام پر آ گئی ہے جس میں انہوں نے عمران خان پر جنسیت اور منشیات کے الزامات کی بھرمار کر دی ہے اور ان کی اولادوں کے بارے میں بھی کئی حیران کن دعوے کیے ہیں۔انہوں نے ایسا ہی ایک دعویٰ یہ کیا ہے کہ عمران خان حکومت میں آ کر اپنی بیٹی ٹیریان کو پاکستان لانے کا ارادہ رکھتے تھے۔کتاب میں ایک جگہ وہ لکھتی ہیں کہ ’’عمران خان اپنی بیٹی ٹیریان پر بہت فخر کرتے تھے اور ان کا ذکر ہمیشہ فخریہ انداز میں کرتے تھے۔وہ کہتے تھے کہ ٹیریان کی شکل ہو بہو ان کی والدہ شوکت خانم جیسی ہے۔ وہ ٹیریان کی بہت تعریف کرتے تھے کہ انتہائی کم عمری میں کس طرح کے حالات سے گزری ، پھر بھی اس نے اپنے آپ کو سنبھالے رکھا، بالخصوص اپنی ماں کی موت کے بعد۔‘‘

ریحام خان اس حوالے سے مزید لکھتی ہیں کہ ’’جب بھی ٹیریان کا ذکر ہوتا ، عمران خان شریف برادران کو بہت کڑوی کسیلی سناتے اور کہتے کہ انہوں نے اس معاملے کو بہت ہوا دے دی ہے جس کی وجہ سے وہ اپنی بیٹی کو پاکستان نہیں لا سکتے۔ وہ ڈرتے تھے کہ اگر اپنی بیٹی کو انہوں نے ملنے کے لیے بلایا تو شریف برادران ایک بار پھر اس معاملے کو سیاسی مقصد کے لیے استعمال کریں گے۔ وہ کہا کرتے تھے کہ ’جب میری حکومت بن جائے گی تو میں اپنی بیٹی کو اپنے پاس لے آؤں گا یا کم از کم وہ مجھ سے ملنے یہاں آیا کرے گی۔‘میں سمجھتی تھی کہ یہ ناممکن ہے مگر پھر بھی میں انہیں تجویز دیتی کہ انہیں حکومت میں آنے کا انتظار نہیں کرنا چاہیے اور اب بھی ٹیریان کو یہاں ملنے کے لیے بلانا چاہیے لیکن احتیاط کے ساتھ۔ تاہم اس کے جواب میں کہتے کہ میں یہ رِسک نہیں لے سکتا۔‘‘واضح رہے کہ ریحام خان نے اپنی یہ کتاب کسی پبلشر سے نہیں چھپوائی بلکہ اسے ایمازون کے ٹیبلٹ کنڈل پر جاری کر دیا ہے۔ اس کی قیمت 9.99ڈالر رکھی گئی ہے اور اسے صرف آن لائن پڑھا جا سکتا ہے۔ اس کتاب کا نام بھی انہوں نے ’’ریحام خان‘‘ ہی رکھا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -