” 3 نوجوانوں نے سر عام میرے ساتھ یہ شرمناک حرکت کی لیکن کوئی میری مدد کو نہ آیا “ پاکستانی ماڈل آمنہ بابر نے ایسی بات کہہ دی کہ ہنگامہ برپا ہوگیا

” 3 نوجوانوں نے سر عام میرے ساتھ یہ شرمناک حرکت کی لیکن کوئی میری مدد کو نہ ...
” 3 نوجوانوں نے سر عام میرے ساتھ یہ شرمناک حرکت کی لیکن کوئی میری مدد کو نہ آیا “ پاکستانی ماڈل آمنہ بابر نے ایسی بات کہہ دی کہ ہنگامہ برپا ہوگیا

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کی صف اول کی ماڈل آمنہ بابر کو اس وقت کچھ نوجوانوں کی جانب سے ہراساں کیا گیا جب وہ اپنی والدہ کو لینے کیلئے گھر جارہی تھیں۔ آمنہ بابر نے انہیں ہراساں کرنے والے نوجوانوں کی تصاویر سوشل میڈیا پر پوسٹ کی ہیں ۔

انسٹا گرام پر آمنہ بابر نے تین تصاویر شیئر کیں اور لکھا ’جو میرے ساتھ ہوا ہے اس کے بعد میں اس حوالے سے بہت پریشان ہوں کہ ہم کیسے معاشرے میں رہ رہے ہیں۔ میں ایک ضروری کام کے بعد واپس گھر آرہی تھی تاکہ اپنے والدہ کو لے آﺅں ۔ جب میں گھر کے راستے میں تھی تو ان لڑکوں نے میری طرف دیکھ کر عجیب شکلیں بنانا شروع کردیں اور آوازے کسنے لگے، چونکہ میں اکیلی تھی اس لیے ڈر گئی لیکن اس دوران کسی نے بھی میری مدد کرنے کی کوشش نہیں کی"۔

آمنہ بابر نے مزید لکھا "اپنی والدہ کو گھر سے اٹھانے کے بعد میں شاپنگ مال میں آئی تو ایک بار پھر یہ لڑکے کھڑے ہوئے تھے۔میں نے ان لڑکوں کی تصاویر بنالیں ، اس دوران ایک لڑکے نے اپنے ہاتھ کی درمیانی انگلی میری طرف بلند کی اور مجھے بد معاش کہا۔یہ حرکت دیکھ کر میری والدہ کو غصہ آگیا اور انہوں نے اپنا جوتا اتار لیا لیکن اسی دوران کچھ لوگوں نے لڑکوں کو وہاں سے بھگادیا"۔

آمنہ بابر نے سوال اٹھایا کہ آخر مرد کیوں سمجھتے ہیں کہ انہیں خواتین اور لڑکیوں کو دھمکیاں دینی چاہئیں ، آخر یہ سب کب ختم ہوگا، جب یہ سب ہورہا ہوتا ہے تو لوگ مدد کرنے کی بجائے تماشہ کیوں دیکھتے ہیں اور آخر یہ سب کیسے قابل قبول ہے؟۔

آمنہ بابر کے ساتھ پیش آنے والے واقعے پر سوشل میڈیا صارفین سخت غم و غصے کا اظہار کر رہے ہیں۔ عائشہ حسن نامی انسٹا گرام صارف نے اسے انتہائی گھٹیا حرکت قرار دیا اور کہا کہ اگر ہمارے ملک کے بچے یہ حرکتیں کر رہے ہیں تو ان بڑوں کا کیا جو ریپ بھی کرتے ہیں اور آزاد بھی گھومتے ہیں۔ یہ سب اس لیے ممکن ہے کیونکہ ہم ان کے خلاف ایکشن نہیں لیتے جس سے وہ اور بھی شیر ہوجاتے ہیں، ایسے لوگوں کو سبق سکھانا چاہیے تاکہ ان کی دوبارہ ایسی حرکت کرنے کی ہمت نہ ہو۔

حمزہ بھٹی نے آمنہ بابر کو ان نوجوانوں کو زناٹے دار تھپڑ رسید کرنے کا مشورہ دیا۔

حیات آصف نے نوجوانوں کی اس حرکت پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ ہم بطور قوم ناکام ہوچکے ہیں لیکن بہت جلد تبدیلی آئے گی۔

حسن شہزاد نے کہا کہ اسی لیے وہ لڑکیوں کو کک باکسنگ یا کراٹے سیکھنے کی ترغیب دیتے ہیں تاکہ ایسے گدھوں کو سبق سکھایا جاسکے۔

ماڈل گرل کنول الیاس نے اسے تعلیم کی کمی قرار دیا اور کہا کہ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ انہیں یہ سکھایا ہی نہیں گیا کہ خواتین کا احترام کیسے کرنا ہے۔ میں اس بات پر حیران ہوتی ہوں کہ جب وہ اس طرح کی حرکتیں کرتے ہیں تو کیا وہ اپنے گھر میں موجود خواتین کو بھول جاتے ہیں، مجھے ایسے لوگوں پر ہمیشہ ہی غصہ آتا ہے۔ میرا خیال ہے کہ ایسے لوگوں کو خواتین کا احترام کرنے کا سبق سکھانا چاہیے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /تفریح

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...