اپوزیشن کے عمران خان کا پاکستان بند کرنے کا خواب ان کے اقتدار میں آکر پورا ہوگیا، پاکستان واقعی بند ہوگیا

اپوزیشن کے عمران خان کا پاکستان بند کرنے کا خواب ان کے اقتدار میں آکر پورا ...
اپوزیشن کے عمران خان کا پاکستان بند کرنے کا خواب ان کے اقتدار میں آکر پورا ہوگیا، پاکستان واقعی بند ہوگیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اپوزیشن کے عمران خان کا پاکستان بند کرنے کا خواب ان کے اقتدار میں آکر پورا ہوگیا،تاجر برادری کی ٹیکسوں کے نفاذ کیخلاف آج ملک گیر ہڑتال ہے،لاہور،فیصل آباد،راولپنڈی سمیت پنجاب کے بیشتر شہروں میں تمام چھوٹے بڑے تجارتی مراکز بند ہیں جبکہ پشاور اور کوئٹہ میں شٹرڈاﺅن ہڑتال ہے ،پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن نے 17 جولائی تک ہڑتال موخر کردی،مرکزی چیئرمین نعیم بٹ کا کہنا ہے کہ گندم اور جوکر پر سیلز ٹیکس ختم نہ ہوا تو بدھ سے فلور ملز بند کردیں گے اورآٹے کی سپلائی بھی روک دیں گے ،ادھر نان روٹی ایسوسی ایشن نے پیر سے روٹی 15 اور نان 20 روپے کرنے کی دھمکی دیدی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ملک بھر کی تاجربرادری ٹیکسوں کی بھرمار اور معاشی پالیسیوں سے اختلاف کی بنا پر آج ملک گیر ہڑتال جاری ہے،وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں آل پاکستان انجمن تاجران کی طرف سے شٹرڈاؤن ہڑتال کی کال پر آبپارہ مارکیٹ،کراچی کمپنی،جناح سپرمارکیٹ مکمل طور پر بند ہیں اس کے علاوہ اسلام آبادکے دیگرسیکٹرزمیں بھی کاروباری مراکزجزوی طور پربند ہیں، راولپنڈی میں بھی ٹیکسزمیں اضافے کیخلاف کاروباری مراکزبندہیں ،ٹیکسزکیخلاف مری روڈ،راجابازار،صدرکی مارکیٹس میں ہڑتال ہے،ادھر ملتان میں تاجروں نے ٹیکسزمیں اضافے کےخلاف شٹرڈاؤن ہڑتال کر رکھی ہے،غلہ منڈی،گھنٹہ گھر،حسین آگاہی اوردیگرمارکیٹیں مکمل طور پر بند ہیں ، پاکستان کے صنعتی شہرفیصل آبادمیں مرکزی تنظیم تاجران کی کال پرتاجروں کی ہڑتال جاری ہے،گھنٹہ گھر کے اطراف بازاراوردکانیں بند ہیں، ہڑتال سیلزٹیکس،شناختی کارڈکی شرط کیخلاف کی جارہی ہے،گوجرانوالہ ،نوشہرو فیروز،وہاڑی،میاں چنوں،ساہیوال،چیچہ وطنی، کبیروال میں بھی تاجر برداری کی شٹرڈاؤن ہڑتال ہے ۔بلوچستان میں انجمن تاجران پاکستان کی کال پرمتعددشہروں میں ہڑتال ہے،ہڑتال کے باعث کاروباری مراکز، مارکیٹیں بندہیں جبکہ خیبرپختونخوامیں بھی متعدداضلاع میں تاجروں نے ہڑتال کررکھی ہے ،ہڑتال کے باعث دکانیں اور مارکیٹیں بند ہیں،تاجروں کا کہنا ہے کہ ٹیکس اورگیس کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیاجائے۔