درمیان والی انگلی تو لوگ اکثر غصے میں دکھاتے ہیں لیکن کیا آپ کو اس کی دلچسپ تاریخ معلوم ہے؟ جانئے

درمیان والی انگلی تو لوگ اکثر غصے میں دکھاتے ہیں لیکن کیا آپ کو اس کی دلچسپ ...
درمیان والی انگلی تو لوگ اکثر غصے میں دکھاتے ہیں لیکن کیا آپ کو اس کی دلچسپ تاریخ معلوم ہے؟ جانئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) اکثر لوگ غصے میں کسی دوسرے کو درمیان والی انگلی دکھاتے ہیں، جس کا مطلب آج کے دور میں غصے کا اظہار لیا جاتا ہے مگر کبھی آپ نے سوچا کہ درمیانی انگلی دکھانے کے اس اشارے کی ابتداءکہاں سے ہوئی؟ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اس روایت کا سرا قدیم یونانی تہذیب سے جا کر ملتا ہے۔ ہزاروں سال قبل اس یونانی تہذیب کے لوگ بھی درمیانی انگلی دکھاتے تھے، اگرچہ وہ بھی اس کے ذریعے غصے کا اظہار ہی کرتے تھے مگر ان کے نزدیک اس کا مطلب انتہائی شرمناک ہوتا تھا۔
رپورٹ کے مطابق قدیم یونانی باشندے درمیانی انگلی کو مردانہ عضو مخصوصہ کہتے تھے اور اس کے دونوں اطراف کی انگلیوں کو خصیے۔ چنانچہ جب آپ باقی انگلیاں بند کرکے صرف درمیانی انگلی کھڑی کرتے ہیں تو قدیم یونانیوں کے مطابق اس کا کیا مطلب ہوتا ہے آپ بخوبی سمجھ سکتے ہیں۔ اس دور میں یونانیوں نے اگر کہیں مردانہ عضو مخصوصہ کا ذکر کرتا ہوتا تو اس کی جگہ ہاتھ کا یہ اشارہ بھی بنا دیتے تھے۔ یونانیوں نے درمیانی انگلی کا ایک نام Digitus Impudicusرکھا ہوا تھا جس کا مطلب ’ناپاک انگلی‘ ہے۔
اس اشارے کی ایک اور توجیہہ بھی بیان کی جاتی ہے۔ کہاجاتا ہے کہ 1415ءمیں جب فرانس اور برطانیہ کے درمیان اگین کورٹ کی جنگ ہوئی تو فرانسیسی فوجی برطانوی فوجیوں کی درمیانی انگلی کاٹ دیتے تھے، کیونکہ یہ انگلی تیر چلانے کے لیے بنیادی حیثیت رکھتی ہے۔ جنگ کے آخر میں جب فرانسیسی فوج کو شکست ہو گئی تو برطانوی فوجی انہیں اپنی درمیانی انگلی دکھاتے تھے،جس کا مقصد فرانسیسی فوج کی توہین کرنا اور انہیں نیچ بتانا ہوتا تھا۔ بہرحال ان دونوں میں سے جو بھی وجہ ہو، آپ اتنا ذہن میں رکھیں کہ یہ اشارہ دوسرے کی توہین کرنے اور اپنے غصے کے اظہار کے لیے کیا جاتا ہے اور کوئی مہذب اشارہ خیال نہیں کیا جاتا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -