چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد،شہباز شریف نے 5 رکنی کمیٹی قائم کر دی

چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد،شہباز شریف نے 5 رکنی ...
چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد،شہباز شریف نے 5 رکنی کمیٹی قائم کر دی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی اسمبلی  میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر میاں محمد شہباز شریف نےچیرمین اور ڈپٹی چیرمین سینیٹ کے خلاف تحاریک عدم اعتمادکے معاملے پر 5 رکنی کمیٹی تشکیل دیدی،کمیٹی میں چاروں صوبوں سے پارٹی سے تعلق ارکان سینیٹ کو شامل کیا گیا ہے۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شہباز شریف نے کمیٹی میں بلوچستان سے سینیٹرسردار یعقوب ناصر کو بھی نامزدکیا ہے دیگر ارکان میں  پنجاب سے سینیٹر جاوید عباسی، سینیٹر مصدق ملک اور  ڈاکٹر اسد اشرف شامل ہوں گے جبکہ خیبرپختوا سے سینیٹر پیر صابر شاہ کو کمیٹی میں  شامل کیا گیا  ہے۔ شہباز شریف نے کمیٹی کو فوری طور پر کام شروع کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔کمیٹی چئیرمن سینیٹ صادق سنجرانی کیخلاف تحریک عدم اعتماد کی کامیابی اور  نئے چیرمین سینٹ  الیکشن کی حکمت عملی تیار کرے گی،اسی طرح کمیٹی اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کی مشاورت سے ڈپٹی چیرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد ناکام بنانے کی حکمت عملی پر مشاورت بھی کرے گی۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ملک بھر کے تاجروں اور غریب عوام کے ساتھ ہیں،ملک پر مسلط مینڈیٹ چور حکمرانوں نے ملک و قوم کو آئی ایم ایف کو بیچ دیا،عمران نیازی کا پاکستان کو لاک ڈاؤن کرنے کا دیرینہ خواب آخر پورا ہوگیا،مکان، دکان اور کارخانے بند کرنے والے حکمرانوں کی سوچ 'مار دیں گے، گرا دیں گے، بند کر دیں گے' سے آگے نہیں جاتی۔انہوں نے کہا کہ بے گناہ اور مظلوم سیاسی قیدی نواز شریف کے ساتھ ظلم کا نتیجہ قوم بھگت رہی ہے،نواز شریف نے قوم کو مہنگائی، لوڈ شیڈنگ، بدامنی سے نجات دلائی،بجلی،سڑک، روزگار، وقاراور امن و امان دیا،پاکستان 5.8 فیصد شرح سے ترقی کر رہا تھا، دشمنوں کو تکلیف ہوئی کہ نوازشریف پاکستان کو ترقی کیوں دے رہا ہے؟مخالفوں کو تکلیف ہوئی کہ 47 سال میں مہنگائی کی شرح تین فیصد پر کیسے آگئی؟مخالفوں کو تکلیف ہوئی کہ پاکستان کے ریونیو میں اضافہ کیسے ہو گیا؟مخالفوں کو تکلیف ہوئی کہ پاکستان نے آئی ایم ایف سے کیسے جان چھڑا لی؟مخالفوں کو تکلیف ہوئی کہ چین نے پاکستان میں میں 60 ارب کی سرمایہ کاری کیوں کی؟۔انہوں نے کہا کہبے گُنا نوازشریف کے ساتھ روا ظلم ختم کرنا ہوگا،پاکستان اور اس کے عوام کے مفادات کا تحفظ نواز شریف کرسکتا ہے،قوم کے صبر کا مزید امتحان نہ لیا جائے، نواز شریف کو رہا کیا جائے

مزید :

قومی -