سائیکلنگ ٹیم کے ٹرائلز رواں ماہ کے آخری ہفتے متوقع

  سائیکلنگ ٹیم کے ٹرائلز رواں ماہ کے آخری ہفتے متوقع

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان سائیکلنگ فیڈریشن کے صدر سید اظہر علی شاہ نے کہا ہے کہ ورلڈ روڈ سائیکلنگ چیمپئن شپ میں شرکت کیلئے قومی سائیکلنگ ٹیم کے ٹرائلز رواں ماہ جولائی کے آخری ہفتے متوقع ہیں اور لاہور میں سائیکلنگ اکیڈمی کا قیام خوش آئند بات ہے، حکومت سائیکلنگ فیڈریشن کی مالی معاونت کرے، گذشتہ روز گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ورلڈ روڈ سائیکلنگ کے انفرادی ٹائم ٹرائل چیمپئن شپ رواں سال ستمبر میں سوئٹزرلینڈ میں منعقد ہوگی۔

جس میں قومی ٹیم کے کھلاڑیوں کی شرکت بہت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے گذشتہ مالی سال کے دوران جون میں سولہ سپورٹس فیڈریشنز کو گرانٹ دی گئی ہے لیکن پاکستان سائیکلنگ فیڈریشن کا اس میں نام نہیں تھا، سید اظہر علی شاہ نے وفاقی وزیر بین الصوبائی رابطہ ڈاکٹر فہمیدہ مرزا سے اپیل کی ہے کہ قومی ٹیم کی عالمی سائیکلنگ چیمپئن شپ میں شرکت اور ایونٹ کی تیاری کے سلسلہ میں تربیتی کیمپ کے تمام اخراجات حکومت برداشت کرے۔ انہوں نے کہا کہ سائیکلنگ کے کھلاڑیوں نے بین الاقوامی سطح پر بے پناہ میڈلز حاصل کر رکھے ہیں اور امید ہے کہ قومی ٹیم کے کھلاڑی رواں سال ستمبر میں سوئٹزرلینڈ میں کھیلی جانے والی ورلڈ روڈ سائیکلنگ کے انفرادی ٹائم ٹرائل چیمپئن شپ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کریں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سوئٹزرلینڈ میں ستمبر میں منعقد ہونے والی عالمی سائیکلنگ چیمپئن شپ ملتوی ہونے کی ابھی تک کوئی اطلاع نہیں ہے اور ایونٹ کیلئے قومی ٹیم کے چناؤ کے سلسلہ میں ٹرائلز رواں ماہ جولائی کے آخری ہفتے میں متوقع ہیں اور بعد میں ایونٹ کی تیاری کے سلسلہ میں تربیت کیمپ لگایا جائیگا جس کے تمام اخراجات برداشت کرنے کی پاکستان سپورٹس بورڈ سے اپیل کریں گے۔ ایک سوال کے جواب میں سید اظہر شاہ کا کہنا تھا کہ ملک میں سائیکلنگ کے ٹیلنٹ کی کمی نہیں بلکہ وسائل کی کمی ہے اور دنیا میں کوئی بھی کھیل حکومتی اور سپانسر کی سرپرستی کے بغیر ترقی نہیں کرسکتا۔ کھیلوں میں پرائیویٹ سیکٹرز کو آگے آنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ گراس روٹ سطح پر کھیلوں کی ترقی کے لئے تعلیمی ادارے اہم کردار ادا کر سکتے ہیں، سکول اور کالجز کی سطح پر سائیکلنگ کے مقابلے باقائدگی سے منعقد ہو رہے ہیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -