حکومت جمہوری استحکام کیلئے بلدیاتی انتخابات کاا علان کرے، جاوید قصوری

حکومت جمہوری استحکام کیلئے بلدیاتی انتخابات کاا علان کرے، جاوید قصوری

  

لاہور (پ ر)امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہاہے کہ حکمرانوں کے ناعاقبت اندیش فیصلوں کی بدولت پاکستان کے 22کروڑ عوام مایوس اور پریشان ہیں۔ حکمرانوں کے معاشی صورت حال کو بہتر بنانے کی تمام اقدامات محض ڈنگ ٹپاؤ اور بلند بانگ کھوکھلے دعوے عوام کے زخموں پر نمک پاشی کرنے کے مترادف ہیں۔جمہوری نظام کے استحکا م کے لئے حکومت بلدیاتی انتخابات کا اعلان کرے۔ ملک میں حقیقی تبدیلی کے لیے جماعت اسلامی بلدیاتی انتخابات میں بھر پور انداز میں حصہ لے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف اضلاع کے دورہ جات کے موقع پرخواتین کے نظم، ضلعی و زونل ذمہ داران، سیاسی کمیٹی کے ارکان اور برادر تنظیمات کے مشترکہ اجلاسوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ قرضوں میں کمی کا دعویٰ کرنے والوں نے قوم کو مزید قرضوں کے بوجھ تلے دبادیا ہے۔ وزیر اعظم نے پاکستان کو مدینہ کی طرز پر اسلامی ریاست بنانے، سب کے لیے بے لاگ احتساب، کشکول اٹھانے پر موت کو ترجیح دینے، ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ بے گھر افراد کو چھت دینے کے جو وعدے کیے تھے، وہ ہوا میں تحلیل ہوچکے ہیں۔ وسائل سے مالامال پاکستان ماضی کے حکمرانوں کی لوٹ اور موجودہ حکمرانوں کی نا تجربہ کاری و نا اہلی کے سبب مسائلستان بن چکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اقتصادی محاذ پر حکومت چاروں شانے چت ہوچکی ہے۔ معاشی اور اقتصادی زبوں حالی نے مہنگائی اور بے روزگاری میں ریکارڈ اضافہ کردیا ہے۔ جس کی وجہ سے عوام کے اندر سخت مایوسی اور بے چینی پائی جاتی ہے۔ پورے ملک میں اضطراب کی کیفیت ہے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ حکومت نے اپنے کسی وعدے کو پورا نہیں کیا۔ رہی سہی کسر کرونا وبا کے دوران لاک ڈاؤن نے پوری کردی ہے۔ ملک میں اس وقت دو کروڑ افراد بے روزگار ہوچکے ہیں۔ حکومت کی امداد کہاں خرچ ہورہی ہے کوئی نہیں جانتا۔ ملکی حالات پہلے سے زیادہ بد تر ہوگئے ہیں۔ تحریک انصاف میں موجود کمیشن مافیا بے نقاب ہوچکا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -