بجلی شارٹ فال صفر ہو گیا، کے الیکٹرک کا ایندھن فراہمی کو لوڈشیڈنگ کیساتھ جوڑ نا حقائق کے منافی، توانا ئی ڈویژن

  بجلی شارٹ فال صفر ہو گیا، کے الیکٹرک کا ایندھن فراہمی کو لوڈشیڈنگ کیساتھ ...

  

اسلام آباد، کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) ترجمان پاور ڈویژن نے کہا ہے کہ ملک میں بجلی کا شارٹ فال صفر ہوگیاہے۔ترجمان پاور ڈویژن نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں بجلی کی طلب 19 ہزار 697 میگا واٹ تک پہنچ گئی جبکہ مجموعی پیداوار 20 ہزار میگا واٹ ہے۔ ترجمان نے کہا کہ ملک بھر میں کہیں بھی بجلی کا شارٹ فال نہیں۔دریں اثناء ترجمان وزارت توانائی نے کہا ہے کہ فیول کی عدم فراہمی کراچی میں لوڈشیڈنگ کا باعث بننے کا دعویٰ غلط ہے۔کے الیکٹرک نے تسلیم کیا کہ ان کو 290 ایم ایم سی ایف ڈی گیس مل رہی ہے، ایندھن فراہمی کو لوڈشیڈنگ کے ساتھ جوڑنا کراچی کے عوام سے حقائق چھپانے کے مترادف ہے۔ ملکی پیداوار کا 80 فیصد فرنس آئل پٹرولیم ڈویژن کی مداخلت سے کے الیکٹر ک کو مل رہا ہے۔ کے الیکٹرک نے بجلی تقسیم کار سسٹم میں مطلوبہ سرمایہ کاری نہیں کی۔ اگر وفاقی حکومت زیادہ بجلی بھی دے تو کے الیکٹرک کو سسٹم اپ گریڈ کرنے میں کئی سال لگ جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک کے سسٹم کو پیک ٹائم میں 100 سے 200 میگاواٹ کی کمی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ وفاقی حکومت نے کے الیکٹرک کو 1000 میگا واٹ بجلی دینے کی آفر بھی کی جبکہ11 جولائی کی میٹنگ میں طے ہوا کہ وفاقی حکومت کے الیکٹرک کو مزید 500 ٹن فرنس آئل فراہم کرے گی۔ ایندھن کی فراہمی تو ایک طرف ان کا سسٹم تیار بجلی لینے سے بھی قاصر ہے۔دوسری جانب کے الیکٹرک نے گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وفاقی وزیراسد عمر کے دعوؤں کو ہوا میں اڑا دیا۔شہر کے مختلف علاقوں میں غیر ا علانیہ شیڈنگ بدستور جاری ہے۔کے الیکٹرک کو فرنس آئل بھی مل گیا اور گیس کی فراہمی بھی بحال ہوگئی ہے لیکن شہر قائد میں لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ ختم نہیں ہوسکا۔ ہفتے کی درمیانی شب سے اتوار کے روز دن کے اوقات میں بھی شہر میں غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ گلشن اقبال، لانڈھی،کورنگی، لیاری، شیری جناح کالونی، صدر، برنس روڈ، میں بجلی اب تک بحال نہیں ہوئی۔ محمودآباد، گلستان جوہر، ماڑی پور ولیج، پی ای سی ایچ ایس سمیت دیگر علاقوں میں طویل دورانیہ کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔

پاور ڈویژن

مزید :

صفحہ آخر -