ڈہرکی:اندھا قتل24گھنٹے بعد ٹریس، دوست کا اعتراف جرم

  ڈہرکی:اندھا قتل24گھنٹے بعد ٹریس، دوست کا اعتراف جرم

  

ڈہرکی (نامہ نگار) پولیس نے اندھے قتل کا معمہ 24گھنٹہ کے اندر (بقیہ نمبر51صفحہ7پر)

حل کر لیا قاتل گرفتارکرلیا،مرحوم عثمان ملک کا قاتل اس کا دوست ہی نکلا مورخہ 9جولائی 2020 کی شام عثمان ملک کے والد نے کھمبڑا پولیس کو اطلاع دی کہ ہمارا بچہ عثمان ملک گم ہیایس۔ایس۔پی گھوٹکی عمر طفیل صاحب نے اس واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے، ڈی۔ایس۔پی اباڑو کو بچہ کو ڈھونڈنے کی زمہ داری دی ڈی۔ایس۔پی کی سربراہی میں پولیس اس کیس کی ہر زاویہ سے تفتیش کر رہی تھی پولیس نے 1 مشکوک ملزم حاجی ولد محمد رمضان کو پکڑ کر تفتیش کی تو اس نے اقبال جرم کر لیا اور پولیس کو بتایا کہ پچھلے 2/3 سال سے اس لڑکے عثمان کی میرے ساتھ دوستی تھی یہ میرے پاس میرے گھر آ جاتا تھا اور میں اس کے ساتھ پچھلے دو سال سے زیادتی بھی کر رہا تھا اب اس نے گوٹھ دوسرے لڑکوں سے دوستی کر لی تھی اور مجھے مسلسل نظر انداز کر رہا تھا اس غصہ کی وجہ سے میں نے اس کو بلا کر اپنے ساتھ فصل میں لے جا کر کسی (کودال) کی چوٹیں مار کر اور اسکا گلہ دبا کر قتل کر کے فصل میں چھپا دیا تھا اور موقع پا کر رات کو اس کی لاش کنویں میں پھینک دی ملزم نییہ بھی بتایا کہ میں عثمان کے ورثاء کے ساتھ مل کر عثمان کو ڈھونڈ تا رہا تاکہ مجھ پرشک نہ کرسکیں۔

اعتراف جرم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -