عارضی الاٹمنٹ کی اراضی واپس لینے کا حکم،حکومت کاشتکاروں کو بے روزگار نہ کرے، خالدمحمود کھوکھر

  عارضی الاٹمنٹ کی اراضی واپس لینے کا حکم،حکومت کاشتکاروں کو بے روزگار نہ ...

  

محسن وال (نمائندہ پاکستان)حکومت کاشتکاروں کو بے روزگار (بقیہ نمبر47صفحہ6پر)

مت کرے،ہزاروں کسان تباہ ہوجائیں گے اگر گورنمنٹ نے اپنا فیصلہ واپس نہ لیا تومجبوراً ہمیں احتجاج کرنا ہوگا،صدر پاکستان کسان اتحاد،پاکستان کسان اتحاد کھوکھر گروپ کے صدر خالد محمود کھوکھر نے مرکزی دفترمیں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ حکومت پنجاب کی جانب سے کاشتکاروں کو دی گئی عارضی الاٹمنٹ کی زمینیوں کو واپس لینے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں،اگر گورنمنٹ کاشتکاروں سے عارضی الاٹمنٹ واپس لیتی ہے تو اس سے ہزاروں گھر بے روزگار ہوجائیں گے،پاکستانی معیشت کو بری طرح نقصان پہنچے گا،کیونکہ کاشتکار ہمیشہ سے معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی مانند ہے،اُنکا کہنا تھاکہ جن کاشتکاروں کے پاس عارضی الاٹنمنٹ کی زمینیں ہیں وہ حکومت کی مقررکردہ فیسیں جمع کروارہے ہیں مگر گورنمنٹ کاشتکاروں سے زمینیں واپس لیکر زیادہ فسیوں کی لالچ میں دوبارہ بولی الاٹمنٹ کرنا چاہتی ہے، کسان اتحاد کے صدر خالد محمود کھوکھر کا مزید کہنا تھاکہ اگر گورنمنٹ اپنا فیصلہ واپس نہیں لیتی تو ہمیں مجبورا ً اپنے حق کیلئے احتجاج کرنا ہوگا،اُنکا کہنا تھا کہ وزیر اعظم پاکستان نے غریبوں کوبہتر روزگار فراہم کرنا کاوعدہ کیا تھا مگر افسوس یہاں پر غریب کو غریب تر اور بے روزگار بنایا جارہا ہے،اس دوران رہنما کسان اتحاد میاں عمیر مسعود،مہر شوکت علی سنپال،میاں سجاد نازش ودیگر عہدیداران وممبران موجود تھے۔

خالد محمود

مزید :

ملتان صفحہ آخر -