مقبوضہ، آزاد کشمیر اور پاکستان سمیت دنیا بھر میں کشمیری آج یوم شہدا ء منائیں گے، بھارتی مظالم جاری، ایک ار نوجوان شہید، اشرف صحرائی گرفتار

مقبوضہ، آزاد کشمیر اور پاکستان سمیت دنیا بھر میں کشمیری آج یوم شہدا ء منائیں ...

  

سرینگر،اسلام آباد، مظفر آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) دنیا بھر میں اور کنٹرول لائن کے دونوں اطراف مقیم کشمیری 13 جولائی 1931کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے پیر کو یوم شہدا منائیں گے۔مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس اور سید علی گیلانی نے کشمیری عوام سے مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال کی اپیل کی ہے۔یوم شہدائے کشمیر پر مقبوضہ وادی میں پہلی مرتبہ عام تعطیل نہیں ہوگی۔یوم شہدائے کشمیر کے موقع پر پاکستان، ریاست جموں وکشمیر کے دونوں اطراف اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری نے تقریبات،ریلیاں اور سیمینارز کا انعقاد کرکے عظیم کشمیری شہداء کو خراج عقیدت پیش کریں گے۔ پی آئی ڈی آزاد کشمیر سے جاری بیا ن کے مطابق وزیر اعظم آزاد کشمیر کی خصوصی ہدایت پر مرکزی تقریب آزادجموں وکشمیر میں وزیر اعظم ہاؤس مظفرآباد میں منعقد ہوگی جس کشمیری شہداء کو سلام عقیدت پیش کیا جائے گا۔ یوں تو مقبوضہ وادی سات دہائیوں سے شہیدوں کے لہو کی گواہ ہے لیکن 13جولائی 1931ء کادن کشمیریوں کی تاریخ کا ایک ایساخون آشام دن ہے جب سری نگر میں 22بے گناہ مسلمانوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے تحریکِ آزادی کشمیر کی بنیاد رکھی 89 سال پہلے کشمیریوں کا کیے جانے والا ناحق خون آج بھی تروتازہ ہے، حریت پسند جاں بازوں کی یاد میں یوم شہدائے کشمیر منایا جارہا ہے۔13جولائی 1931کو مرد مجاہد عبدالقدیر خان کے دیدار کے لیے مظلوم کشمیری سری نگر جیل کے باہر جمع تھے جہاں سے عبدالقدیر خان کو عدالت لے جایا جانا تھا، اس دوران نماز ظہر کا وقت ہوگیا اور کشمیری مظاہرین کو نماز ادا کرنے کی اجازت بھی نہ ملی۔ایسے میں ایک کشمیری اذان کے لیے اٹھا تو ڈوگرہ مہاراجہ کے سپاہی نے گولیوں کی بوچھاڑ کردی اور پھر یکے بعد دیگرے 21جانوں کا نذرانہ دے کر حریت پسندوں نے اذان مکمل کی۔خون کی اس ہولی کے خلاف کشمیری ہر سال 13جولائی کویوم شہداء مناتے ہیں اور اپنے اس عہدکو مزید مستحکم کرتے ہیں کہ کشمیر میں آخری مسلمان تک اور آخری مسلمان کے آخری قطرہ خون تک آزادی کی جنگ جاری رہے گی۔دریں اثنابھارتی قابض فوج نے مقبوضہ کشمیر میں ایک کشمیری نوجوان کو شہید اور ایک حریت رہنما کو گرفتار کر لیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے ضلع بارہ مولا میں قابض بھارتی فوج نے ریاستی دہشتگردی کرتے ہوئے محاصرے کی آڑ میں ایک کشمیری کو شہید جبکہ حریت رہنما اشرف صحرائی کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت ان کو ان کے گھر سے گرفتار کر لیا۔ اشرف صحرائی کی گرفتاری پر حریت رہنما سید علی گیلانی نے آج یوم سیاہ اور ہڑال کی کال دے دی۔

یوم شہدائے کشمیر

مزید :

صفحہ اول -