"ریڈار کی سمت میں غلطی یوکرین کے مسافر طیارے کو گرانے کی وجہ بنی" ایران بالآخر بول پڑا

"ریڈار کی سمت میں غلطی یوکرین کے مسافر طیارے کو گرانے کی وجہ بنی" ایران ...

  

تہران(ویب ڈیسک) ایرانی حکومت کا کہنا ہے کہ یوکرین کے مسافر طیارے کو ریڈار کی سمت میں غلطی کی وجہ سے مار گرایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ایرانی حکومت نے کہا ہے کہ ایئر ڈیفنس سسٹم کے ایک ریڈار کو جوڑنے میں غلطی یوکرین کے مسافر طیارے کو گرانے کی وجہ بنی۔ایران کے سول ایوی ایشن اتھارٹی کی ایک رپورٹ کے مطابق ریڈار کو جوڑنے کے لیے پروسیجر کو فالو کرنے میں غلطی کی وجہ سے سسٹم میں 107 ڈگری کا ایرر واقع ہوا۔اس غلطی کی وجہ سے جہاز گرنے سے پہلے اور بھی غلطیاں ہوئیں۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے مطابق جہاز کی طرف داغے گئے دو میزائل ایئر ڈیفنس یونٹ کے آپریٹر کی طرف سے تھے جنہوں نے کوارڈینیشن سینٹر سے ہدایات لیے بغیر ایسا کیا۔یاد رہے کہ یوکرین انٹرنیشنل ایئر لائن کا طیارہ رواں برس 8 جنوری کو تہران کے ایئرپورٹ سے اڑان بھرنے کے کچھ ہی دیر بعد گر کر تباہ ہوگیا تھا جس کے نتیجے میں 176 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

مسافر طیارے میں عملے کے 9 افراد بھی سوار تھے جبکہ مرنے والوں میں ایران کے 82، کینیڈا کے 63، یوکرین کے 11، سوئیڈن کے 10، 4 افغانستان اور جرمنی و برطانیہ کے تین، تین شہری موجود تھے۔بعدازاں ایران نے اعتراف کیا تھا کہ یوکرین کا مسافر طیارہ غلطی سے میزائل حملے کا نشانہ بنا۔

مزید :

بین الاقوامی -