پاکستان کے افغان مصنوعات کی بھارت برآمد کیلئے واہگہ بارڈر کھولنے کے اعلان پر سینئر صحافی طلعت حسین بھی میدان میں آ گئے ، سوال اٹھا دیا

پاکستان کے افغان مصنوعات کی بھارت برآمد کیلئے واہگہ بارڈر کھولنے کے اعلان پر ...
پاکستان کے افغان مصنوعات کی بھارت برآمد کیلئے واہگہ بارڈر کھولنے کے اعلان پر سینئر صحافی طلعت حسین بھی میدان میں آ گئے ، سوال اٹھا دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان نے افغان مصنوعات کی بھارت برآمدات کیلئے واہگہ بارڈر کھولنے کا اعلان کر دیاہے جس پر اب صحافی طلعت حسین بھی میدان میں آ گئے ہیں اور انہوں نے پیغام جاری کرتے ہوئے سوال اٹھا دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق صحافی طلعت حسین نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ”بھارت اب افغانی منصوعات پاکستان کے ذریعے برآمد کر سکتا ہے ، واہگہ بارڈر کو کھول دیا گیاہے تاکہ بھارت کابل کے ساتھ کاروبار کر سکے جو کہ اب ایک راستہ ہے لیکن اس نکتے پر کشمیریوں کو کیا سنگنل بھیجا جا رہاہے ۔

پاکستان نے افغانستان کی بھارت کو زمینی راستے سے برآّمدات کے لئے واہگہ بارڈر کھولنے کا اعلان کردیا ہے، جس کے تحت 15 جولائی سے بھارت کو افغان مصنوعات کی زمینی راستے سے ترسیل شروع ہوجائے گی۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق واہگہ بارڈر کو 15 جولائی سے پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈ معاہدے کے تحت کھولا جا رہا ہے، پاکستان نےافغان حکومت کی خصوصی درخواست پر واہگہ بارڈر کھولنے کا فیصلہ کیا۔

دفتر خارجہ کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز میں بتایا گیا کہ پاکستان نے افغان ٹرانزٹ ٹریڈ معاہدے کے تحت اپنا وعدہ پورا کردیا، معاہدے کے تحت پاکستان نے دونوں ممالک کے درمیان تمام باہمی تجارت بحال کردی ہے۔ کورونا وائرس کے تناظر میں تمام ایس او پیز اور پروٹوکولز کا خیال رکھا جائے گا۔

مزید :

قومی -