”جو ڈینلی اتنا اچھا نہیں کہ اسے ٹیسٹ میچ کیلئے ٹیم میں رکھا جائے“ سابق انگلش کپتان مائیکل وان ویسٹ انڈیز کے ہاتھوں پہلے ٹیسٹ میچ میں شکست کے بعد اپنے ہی کھلاڑی پر برس پڑے

”جو ڈینلی اتنا اچھا نہیں کہ اسے ٹیسٹ میچ کیلئے ٹیم میں رکھا جائے“ سابق انگلش ...
”جو ڈینلی اتنا اچھا نہیں کہ اسے ٹیسٹ میچ کیلئے ٹیم میں رکھا جائے“ سابق انگلش کپتان مائیکل وان ویسٹ انڈیز کے ہاتھوں پہلے ٹیسٹ میچ میں شکست کے بعد اپنے ہی کھلاڑی پر برس پڑے

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مائیکل وان نے کہا ہے کہ انگلش ٹیم کو ویسٹ انڈیز کیخلاف دوسرے ٹیسٹ میچ کیلئے جو ڈینلی کی جگہ زیک کرالی کو ٹیم میں شامل کرنا چاہئے۔

تفصیلات کے مطابق جو ڈینلی ویسٹ انڈیز کیخلاف پہلے ٹیسٹ میچ صرف 18 گیندوں پر 29 رنز ہی بنا سکے اور یوں گزشتہ 8 اننگز میں وہ نصف سنچری بنانے میں بھی ناکام رہے ہیں جبکہ کینٹ ٹیم میں ان کے ساتھی کھلاڑی زیک کرالی دوسری اننگز میں 76 رنز بٹورنے میں کامیاب رہے جس پر مائیکل وان کا کہنا ہے کہ انگلش ٹیسٹ ٹیم کے مستقل کپتان جو روٹ چونکہ دوسرے ٹیسٹ میچ کیلئے ٹیم میں واپس آ جائیں گے اس لئے جو ڈینلی کو باہر بٹھا دیا جائے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے مائیکل وان نے کہا کہ ”اس معاملے میں بحث تو بنتی ہی نہیں ہے۔ آپ اس بات پر بحث ضرور کر سکتے ہیں کہ جو ڈینلی خاصے خوش قسمت رہے جنہوں نے 15 ٹیسٹ میچوں میں انگلینڈ کی نمائندگی کی لیکن ایسے بہت سے کھلاڑی ہیں جنہوں نے صرف 8 ٹیسٹ میچز کھیلے اور سنچریاں بھی بنائیں۔“

ان کا کہنا تھا کہ ”جو ڈینلی نے موقع گنوا دیا ہے اور اب انگلینڈ ٹیسٹ ٹیم زیک کرالی کو ہی منتخب کرے ، مجھے ڈینلی سے متعلق بہت دکھا ہے لیکن وہ ٹیسٹ کرکٹ کیلئے ابھی اتنے اچھے نہیں ہوئے۔ انگلینڈ کو ڈینلی سے متعلق فیصلہ کرنا ہو گا اور زیک کرالی کو یقینا ٹیم میں رہنا ہے۔“

مزید :

کھیل -