ڈرامے لکھنا کیوں چھوڑے ، انور مقصود دل کی بات زباں پر لے آئے 

ڈرامے لکھنا کیوں چھوڑے ، انور مقصود دل کی بات زباں پر لے آئے 
ڈرامے لکھنا کیوں چھوڑے ، انور مقصود دل کی بات زباں پر لے آئے 

  

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان ڈرامہ انڈسٹری کو اردو ادب اور مزاح کے حسین امتزاج سے بھرپور ڈرامے دینے اور خود اداکاری کے جوہر دکھانے والے مصنف انور مقصود اب ڈرامے نہیں لکھتے ، انور مقصود نے اس کے پیچھے پوشیدہ وجہ بھی بتا دی ۔

اردو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے انور مقصود نے کہا کہ آج کل جیسا مواد پیش کیا جا رہا ہے وہ میرے معیار کا نہیں ، اس لئے خود میں نے ڈرامے نہ لکھنے کا فیصلہ کیا ہے ،ریٹنگ کی دوڑ میں مارکیٹنگ ٹیم فیصلہ کرتی ہے کہ ڈراموں کے کردار کون ہوں گے ، ایسے میں پروڈیوسر اور ڈائریکٹرز کا کردار بہت پیچھے رہ جاتا ہے ۔لوگوں نے ساس بہو کے جھگڑوں میں دلچسپی لینی شروع کر دی اور پھر یہ ٹرینڈ بن گیا ۔

انور مقصود نے کہا کہ جب عوام کی دلچسپی انہیں کاموں میں ہے تو کیا کریں ، اچھے مصنفین تو ایسا لکھنے کا تصور بھی نہیں کر سکتے لہذا دوری اختیار کرلی ہے ۔

واضح رہے کہ انور مقصود آنگن ٹیڑھا ، سٹوڈیو 420، کالونی 52، ستارہ اور مہر النساء جیسے کئی معروف ڈرامے تحریر کر چکے ہیں ۔

مزید :

تفریح -