گیس انفراسٹرکچر سیس میں 200 فیصد اضافہ انڈسٹریز کو بحران میں مبتلا کردے گا، راجہ عدیل

گیس انفراسٹرکچر سیس میں 200 فیصد اضافہ انڈسٹریز کو بحران میں مبتلا کردے گا، ...

لاہور (وقائع نگار)تاجر رہنما وانجمن تاجران لوہا مارکیٹ شہید گنج (لنڈا بازار)لاہورکے سینئر نائب صدر راجہ عدیل نے کہا ہے کہ گیس انفراسٹرکچر سیس میں 200 فیصد اضافہ انڈسٹریز کو بحران میں مبتلا کردے گا۔گیس انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ سیس اور گیس ڈویلپمنٹ سرچارج کی مد میں اضافہ سے صارفین پر 191ارب کا اضافی بوجھ پڑے گا ،انہوں نے کہا کہ جی آئی ڈ ی سی میں اضافہ سے ملک کی صنعتی پیداوار متاثر ہوگی ،پیداواری لاگت بڑھنے سے اشیاء کی قیمتیں بڑھیں گے اور مہنگائی میں ہوشربا اضافہ ہوگا جس سے ہر طبقہ فکر متاثر ہوگا راجہ عدیل نے کہا کہ صنعتی شعبے کیلئے گیس ٹیرف میں پہلے ہی بہت زیادہ اضافہ کردیا گیا تھا اب موجود اضافوں سے گیس سے چلنے والی انڈسٹریز متاثر ہوں گی انہوں نے مطالبہ کیا کہ انڈسٹریز کیلئے سستی اور مسلسل گیس کے حصول کیلئے پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جانا چاہیے انہوں نے اس امر پر سخت تشویش کا اظہار کیا کہ بجٹ2014-15میں پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ کی تعمیر کیلئے کوئی رقم مختص نہیں کی گئی

جبکہ معاہدے کی رو سے اگر پاکستان نے یکم جنوری 2015سے ایران سے گیس نہ خریدی تو3کروڑ ڈالر یومیہ جرمانہ ادا کرنا ہوگا ۔حکومت اس منصوبہ کی تکمیل کیلئے سنجیدگی سے اقدامات کرے اور منصوبہ مکمل کرنے کیلئے فنڈز مختص کرنے کے ساتھ ساتھ جلد تکمیل یقینی بنائے

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...