داسو پاور پراجیکٹ کے لئے عالمی بینک کا قرضہ

داسو پاور پراجیکٹ کے لئے عالمی بینک کا قرضہ

 

عالمی بینک نے داسو پاور پراجیکٹ کے لئے 60کروڑ ڈالر قرضے کی منظوری دی ہے، یہ ڈیم دریائے سندھ پر خیبرپختونخوا کے ضلع کوہستان میں تعمیر کیا جائے گا اور اس سے 4500میگاواٹ بجلی حاصل ہوگی ۔ قرضہ 25سال میں ادا کرنا ہوگا اور اس پر 2فیصد سود بھی ادا کیا جائے گا۔ طویل عرصے کے بعد حکومت پاکستان نے ایک ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر کام شروع کرنے کا ارادہ کیا ہے جس سے نسبتاً سستی اور زیادہ بجلی حاصل ہوگی۔ اس وقت جوہری ، تھرمل، کوئلے اور دوسرے ذرائع سے جو بجلی حاصل کی جارہی ہے وہ پانی سے حاصل ہونے والی بجلی سے بہت مہنگی ہے جو اوسط پاکستانی صارف کی قوت خرید سے باہر ہے، صنعتوں کے لئے یہ بجلی اور بھی مہنگی پڑتی ہے نتیجے کے طورپر پیداواری لاگت میں اضافہ ہوجاتا ہے اور عالمی منڈی میں ہماری مصنوعات کو سخت مقابلے کا سامنا کرنا پڑتا ہے پھر تھرمل وغیرہ سے جو بجلی حاصل ہوتی ہے وہ مطلوبہ مقدار میں دستیاب بھی نہیں ہوتی، جونہی گردشی قرضے بڑھتے ہیں آئی پی پیز پیداوار کم کردیتی ہیں اور یوں لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہوجاتا ہے ، ہماری توانائی کی ضروریات روزبروز بڑھتی جارہی ہیں اس لئے ہمیں بڑے ڈیموں اور پاور پراجیکٹس کی طرف زیادہ توجہ کی ضرورت ہے داسو ایک بڑا پراجیکٹ ہے جسے جلد مکمل ہونا چاہئے ۔ اس کے ساتھ ساتھ دیامر بھاشا ڈیم کی تعمیر کا آغاز بھی جلد ہونا چاہئے۔ دونوں پراجیکٹ ایک عشرے میں مکمل ہوگئے تو دس سال بعد ہم توانائی میں خودکفالت کی منزل کے قریب پہنچ سکتے ہیں، داسو پراجیکٹ کی شروعات اچھی ہیں،امید ہے اس پر جلد کام شروع ہوگا۔

مزید : اداریہ