” کھودا پہاڑ نکلا چوہا “ بوری سے لاش کے بجا ئے جانوروں کے اعضاءبرآمد

” کھودا پہاڑ نکلا چوہا “ بوری سے لاش کے بجا ئے جانوروں کے اعضاءبرآمد

لاہور(بلال چودھری) تھانہ گجر پورہ کے علاقہ میں واقع دھوپ سڑی قبرستان سے بوری بند لاش کی اطلاع ملنے پر علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔پولیس نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر جب بوری کھولی تو” کھودا پہاڑ نکلا چوہا “کے مصداق اس میں سے جانوروں کے اعضاءبرآمد ہوگئے جس کے بعد پولیس تعفن زدہ بوری کو سڑک کے کنارے پھینک کرچلی گئی ۔تفصیلات کے مطابق گجرپورہ میں واقع قبرستان میں گزشتہ روز صبح 10بجے کے قریب بوری بند لاش کی اطلاع ملنے پر مقامی رہائشیوں میں خوف وہراس پھیل گیا۔ قبرستان میں موجود بوٹا مسیح نامی شخص نے 15پر پولیس کو اطلاع دی جس کے بعد تھانہ گجرپورہ کی پولیس موقع پر پہنچ گئی۔اس حوالے سے بوٹا مسیح نے "پاکستان"سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ وہ دھوپ سڑی قبرستان میں موجود نلکے سے پانی بھرنے آیا تھا کہ اس دوران قریب پڑی ایک بوری سے شدید تعفن اٹھ رہا تھا جس کے باعث وہ خوف زدہ ہوگیا اور اس نے پولیس کو اطلاع دی ۔ دیگر عینی شاہد ین محمد عبداللہ اور راشد عزیز نے مزید بتایا کہ بوری بند لاش کی اطلاع ملنے پر جب وہ موقع پر پہنچے تو پولیس بوری کا معائنہ کر رہی تھی جس کے بعد پولیس نے اپنی تفتیش مکمل کرکے کہا کہ بوری میں سے چند ہڈیاں برآمد ہوئی ہیں اور یہ کہتے ہوئے پولیس بوری کو سٹرک کنارے پھینک کر چلی گئی تاہم جہاں پر بوری پھینکی گئی ہے وہ راستہ قبرستان کے درمیان سے گزرتا ہے جس کے باعث شدید تعفن پھیل گیا ہے اور اسی وجہ سے مقامی رہائشی شدید اذیت سے دوچار ہیں۔ علاقہ کے مکین مائیکل کا کہنا تھا کہ پولیس کو اسے ٹھکانے لگانا چاہیے تھا ۔مقامی رہائشی محمد رزاق کا کہنا تھا کہ قبرستان سے برآمد ہونے والی بوری کے حوالے سے پولیس کو تحقیقات کرنی چاہیے تھی کہ کون اسے قبرستان میں لے کر آیا ہے لیکن انہوں نے مزید تفتیش کرنے کی زحمت نہیں کی ہے۔ اس حوالے سے تھانہ گجر پورہ پولیس کاکہنا ہے کہ بوری کو کھولنے پر معلوم ہوا کہ اس میں کسی شخص کی لاش نہیں بلکہ جانوروں کے مختلف عضاءاور ہڈیاں ہیں تاہم یہ کوئی جرم کی واردات نہیں ہے اور اسی وجہ سے مذکورہ واقع کے حواے سے کسی قسم کی قانونی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی ہے۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...