سپریم کورٹ کا سول جج منزہ شہزادی کےخلاف عدالت عالیہ کے فیصلے میں موجود ریمارکس حذف کرنے کا حکم

سپریم کورٹ کا سول جج منزہ شہزادی کےخلاف عدالت عالیہ کے فیصلے میں موجود ...

 لاہور(نامہ نگار)سپریم کورٹ نے خاتون سول جج منزہ شہزادی کی اپیل درخواست منظور کرتے ہوئے ان کے خلاف عدالت عالیہ کے فیصلے میں موجود ریمارکس حذف کرنے کا حکم دے دیا۔چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس تصدق حسین جیلانی کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں اپیل کی سماعت کی۔سول جج منزہ شہزادی کی جانب سے اپیل درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ عدالت عالیہ نے اپنے ایک فیصلے میں منزہ شہزادی کے خلاف سخت ریمارکس لکھے ہیں۔ انہوں نے عدالت کو آگاہ کیا کہ یہ ریمارکس منزہ شہزادی کی اگلے عہدے میں ترقی کی راہ میں بڑی رکاوٹ ثابت ہورہے ہیں اور انکی اگلے عہدے میں ترقی نہیں ہو رہی۔ لاہور ہائیکورٹ کے رجسٹرار محبوب قادر نے سپریم کورٹ کو بتایا کہ خاتون سول جج منزہ شہزادی کا سروس ریکارڈ بہترین ہے لہذا یہ ریمارکس حذف ہونے چاہیں، سپریم کورٹ نے دلائل سننے کے بعد خاتون سول جج کی اپیل درخواست منظور کرتے ہوئے ان کے خلاف عدالت عالیہ کے فیصلے میں موجود ریمارکس حذف کرنے کا حکم دے دیا۔

 حکم

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...