ڈرون حملے پاکستان کی سالمیت کیخلاف ہیں، عسکری ماہرین

ڈرون حملے پاکستان کی سالمیت کیخلاف ہیں، عسکری ماہرین

لاہور(انویسٹی گیشن سیل) عسکری ماہرین کا کہنا ہے کہ ڈرون حملے پاکستان کی سالمیت کیخلاف ہیں امریکہ پاکستان میں دہشتگردی کے خاتمے میں مدد کرنا چاہتاہے تو پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرتے ہوئے غیر مشروط حمایت کرے جنرل(ر)جمشید ایازنے کہا کہ حکومت سیدھے رستے پر چل نکلی ہے مذاکرات کی کامیابی کے مکانا ت شروع دن سے نہیں تھے۔لگتا ہے حکومت کی پالیسی بدل گئی ہے اور طالبان کو بھی سمجھ لینا چاہیے کہ فوج سے ٹکر آسان کام نہیں ۔ڈرون حملے دہشتگردی کے خاتمے میں معاون ثابت ہو سکتے ہیں لیکن کڑی شرائط پاکستان کے مفاد میں نہیں ہیں۔جنرل(ر)راحت لطیف نے کہا کہ امریکن کی خواہش ہے کہ پاکستان جنوبی وزیرستان میں فوجی کاروائیاں شروع کرے ڈرون حملے کبھی بھی پاکستان کے مفاد میں نہیں ہو سکتے کیونکہ اس میں ملکی سالمیت پر آنچ آتی ہے۔حکومت ،پارلیمنٹ اور اپوزیشن کو ڈرون حملوں پر عوام کے سامنے جوابدہ ہونا چاہیے۔امریکہ ،بھارت اور اسرائیل کبھی بھی پاکستان کے دوست نہیں ہو سکتے وہ ہر طریقے سے دنیا کی واحد مسلم ایٹمی طاقت پاکستان کے نیوکلئیر اثاثوں تک رسائی چاہتے ہیں اسلئے حکومت پاکستان کو محتاط رہنا ہو گا۔واضح رہے کہ پاکستان میں تقریباًچھ ماہ بعد ڈرون پھینکے گئے ہیں اس سے قبل 25دسمبر 2013کو ڈرون حملہ کیا گیا تھا جس دن دنیابھر میں کرسمس ڈے بھی منایا جاتا ہے۔

عسکری ماہرین

مزید : صفحہ آخر