بھائی کی بلیک میلنگ سے تنگ سعودی یتیم خاتون نے عدالت سے رجوع کرلیا

بھائی کی بلیک میلنگ سے تنگ سعودی یتیم خاتون نے عدالت سے رجوع کرلیا
بھائی کی بلیک میلنگ سے تنگ سعودی یتیم خاتون نے عدالت سے رجوع کرلیا

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب کی ایک تاجر وویمن نے اپنے چھوٹے بھائی کی بلیک میلنگ سے تنگ آ کر عدالت سے رجوع کرلیا۔عرب میڈیا کے مطابق 50سالہ خاتون نے اپنے 24سالہ بھائی کیخلاف دائر درخواست میں موقف اپنایاکہ اکلوتی وارث ہونے پر چھوٹا بھائی بہن سے بلا جواز رقم کا مطالبہ کرتا ہے اور انکار پر بہن ہی کے خلاف ناروا پابندیوں کی دھمکیاں دیتا ہے ، وہ اسے ’ولی‘ اور اکلوتا محرم ہونے کی بناءپر بلیک میل کر رہا ہے۔درخواست گزار نے موقف اپنایاکہ والدین فوت ہو گئے تو ان کی اولاد میں صرف وہ دو بہن بھائی حیات رہے۔ بھائی بہت چھوٹا تھا جس کی کفالت کی تمام تر ذمہ داری بہن پر عائد تھی۔ بہن کی زیر کفالت تعلیم تربیت پانے کے بعد جب بھائی بالغ ہوا تو وہی اپنی ہمشیرہ کا ’محرم‘ اور’ولی‘ قرار پایا کیونکہ خاتون نے شادی نہیں کی تھی اورجب سے بھائی کو ولی کا درجہ دیا گیا تو اس نے بلیک میلنگ شروع کردی اور یہ سلسلہ چار سال سے جاری وساری ہے ۔رپورٹ کے مطابق اگر خاتون کا دعویٰ درست ہے تو اسے ثابت کرنے کے لیے ٹھوس ثبوت مہیا کرنا ہوں گے. یہاں معاملہ ’ولی‘ کا نہیں بلکہ بلیک میلنگ کا ہے کیونکہ ایک بھائی محض اپنی ’ولایت‘ کی آڑ میں بہن کو بلیک میل کر رہا ہے اور ولایت عہدہ نہیں بلکہ ذمہ داری ہے۔

مزید : بین الاقوامی