اوباما کی مقبولیت میں مزید کمی

اوباما کی مقبولیت میں مزید کمی
 اوباما کی مقبولیت میں مزید کمی

  

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) عالمی سیاست میں امریکہ کے منفی کردار کی وجہ سے دنیا بھر کے عوام تو امریکی رہنماﺅں کو ناپسند کرتے ہی ہیں مگر خود امریکی عوام بھی اپنے رہنماﺅں سے خوش نہیں تحقیقاتی ادارے او آر سی اور امریکی ٹی وی سی این این کے ایک مشترکہ سروے سے معلوم ہوا ہے کہ امریکی صدر باراک اوباما امریکی عوام میں اپنی غیر مقبولیت کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئے ہیں اور اس وقت اوباما کو ناپسند کرنے والے عوام کی تعداد بدنام زمانہ سابق امریکی صدر جارج بش کو ناپسند کرنے والوں کے برابر ہوگئی ہے۔ سروے کے مطابق دونوں صدور کو ناپسند کرنے والوں کی تعداد 51 فیصد ہے۔ اوباما جب اقتدار میں آئے تو 78 فیصد امریکی انہیں پسند کرتے تھے مگر اپنے ساڑھے پانچ سالہ اقتدار کے بعد وہ کافی غیر مقبول ہوچکے ہیں اور یہ پہلی دفعہ ہے کہ اکثریت نے اُن کیلئے ناپسندیدگی کا اظہار کردیا ہے۔ امریکی عوام کو اباما کیلئے ناپسندیدگی میں بیرون ملک جنگوں کے علاوہ ملکی اقتصادی مسائل نے بھی اہم کردار ادا کیا ہے۔ امریکی خواتین اول کیلئے بھی عوام نے اچھے جذبات کا اظہار نہیں کیا۔ ہیلری کلنٹن کو 42 اور مشل اوباما کو 34 فیصد عوام نے ناپسند کیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی