بھارتی نوجوانوں میں نامردی بڑھ رہی ہے، وشوا ہندو پریشد

بھارتی نوجوانوں میں نامردی بڑھ رہی ہے، وشوا ہندو پریشد

نئی دہلی(آن لائن) انتہاپسند ہندو تنظیم وشوا ہندو پریشد کے رہنما پروین توگڑیا نے ہندونوجوانوں میں نامردی بڑھ رہی ہے۔ ہندو شادی شدہ جوڑے مسلمانوں کی بڑھتی آبادی کا مقابلہ کرنے کیلئے زیادہ بچے پیدا کریں۔انتہاپسند ہندو تنظیم وشوا ہندو پریشد کے رہنما اور بابری مسجد شہید کرانے کی مہم میں پیش پیش رہنے والے پروین توگڑیا نے گجرات کے ضلع بھڑوچ میں تنظیم کی تربیتی نشست سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہندو نوجوانوں میں نامردی بڑھ رہی ہے اسلئے وہ تمباکو، پان، گٹکے سمیت مضر صحت اشیاء4 ترک کریں۔ پروین توگڑیا نے اس موقع پر جیب سے ایک دوائی نکالی اور اورکہا کہ یہ دوا ایک ڈاکٹر ہونے کے ناطے میں نے خود تیار کی ہے، اسکی قیمت 600روپے ہے مگر ہندو نوجوانوں کی خاطر میں 500 روپے ہی لوں گا۔ ہندو نوجوان یہ دوائی گھر جا کر استعمال کریں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوو191ں کی آبادی بڑھنے سے ہی ’’گاو191 ماتا‘‘ کا تحفظ ہو سکے گا۔

مزید : عالمی منظر