گاڑیاں بنانے والی کمپنی کے مالک کے ایک جملے نے سام سنگ کو 6ارب روپےکا نقصان پہنچا دیا

گاڑیاں بنانے والی کمپنی کے مالک کے ایک جملے نے سام سنگ کو 6ارب روپےکا نقصان ...
گاڑیاں بنانے والی کمپنی کے مالک کے ایک جملے نے سام سنگ کو 6ارب روپےکا نقصان پہنچا دیا

  

سیؤل(مانیٹرنگ ڈیسک) جنوبی کوریا کی ٹیکنالوجی کمپنی سام سنگ نے الیکٹرک کاروں کی بیٹریاں بنانے کا اعلان مہنگا پڑ گیا ہے۔ ویب سائٹ پاک وہیلز کی رپورٹ کے مطابق سام سنگ نے گزشتہ دنوں اعلان کیا تھا کہ وہ ہائبرڈ اور فل الیکٹرک دونوں قسم کی کاروں کے لیے بیٹریاں تیار کر رہی ہے۔ سام سنگ کی طرف سے یہ اعلان آنے کی دیر تھی کہ لوگوں نے اس کو امریکی کارساز کمپنی ٹیسلا (Tesla) سے جوڑ دیا اور ایک افواہ گردش کرنے لگی کہ ٹیسلا اپنی کاروں کے لیے سام سنگ کی بنائی ہوئی بیٹریاں استعمال کر رہی ہے۔ بالخصوص ٹیسلا کے ماڈل 3کے متعلق یہ بات کہی جا رہی تھی۔ اس پر ٹیسلا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ایلن مسک(Elon Musk)نے ٹوئٹر پر اس افواہ کی تردید کرنے کے لیے ایک ٹویٹ کر دی اور اس ایک ٹویٹ نے سام سنگ کا اربوں کا نقصان کردیا جبکہ معروف الیکٹرانک کمپنی پیناسونک کو فائدہ پہنچا دیا۔ایلن مسک نے ٹویٹ میں لکھا کہ ”میں وضاحت کرنا چاہوں گا کہ ٹیسلا ماڈل 3کے لیے خصوصی طور پر پیناسونک کمپنی کے ساتھ کام کر رہی ہے۔ اس کے برعکس آنے والی خبریں غلط ہیں۔“ایلن مسک کی اس ایک ٹویٹ کے باعث سام سنگ کے حصص کی قیمت میں حیران کن حد تک 8فیصد کمی واقع ہو گئی ہے جس سے کمپنی کو 5کروڑ 80ڈالر ڈالرز(تقریباً6ارب روپے)کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔ ایک طرف اس ایک ٹویٹ نے سام سنگ کا اتنا نقصان کر دیا ہے جبکہ دوسری طرف پیناسونک کو فائدہ پہنچا دیا ہے کیونکہ اس ٹویٹ کے بعد پیناسونک کے حصص کی قیمت میں 3فیصد تک اضافہ ہو گیا ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی