سحروافطار کے اوقات میں لوڈ شیڈنگ عوام کیلئے مشکلات کا باعث ہے،بلال شیرازی

سحروافطار کے اوقات میں لوڈ شیڈنگ عوام کیلئے مشکلات کا باعث ہے،بلال شیرازی

لاہور(خبرنگار) پاکستان مسلم لیگ ق کے رہنما و مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا ہے کہ رمضان میں سحری ،افطار ی اور نما ز کے اوقات میں لوڈ شیڈنگ عوام کے لیے مشکلات کا باعث ہے سحری ،افطاری اور نماز تراویح کے اوقات میں بجلی کی لو ڈ شیڈنگ نے شہریوں کو مایوسیوں میں مبتلا کردیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کو 3سال مکمل ہوگئے ہیں لیکن دعووں اور اعلانات کے باوجود ملک سے لو ڈشیڈنگ کا خاتمہ نہ ہوسکاانتخابات سے قبل 6ماہ میں لو ڈشیڈنگ ختم کرنے کے دعویداروں نے اپنے 3سالہ دور اقتدار میں لوڈشیڈنگ ختم نہ کرسکے اور اب2018 میں اپنے مدت اقتدار کے اختتام پر لوڈ شیڈنگ کے خاتمہ کیلئے بلندو بانگ دعوے کیے جارہے ہیں لیکن انٹرنیشنل واٹر کمیشن کی رپورٹ کے مطابق2018میں بھی پاکستان میں لوڈ شیڈنگ کے خاتم ممکن نہیں کیونکہ 2018میں بجلی کی پیداوار کے ساتھ ساتھ بجلی کی طلب میں بھی بہت زیادہ اضافہ ہوجائے گاان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ہاؤس میں یوتھ ونگ کے کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا کہ لوڈشیڈنگ کے خاتمہ اور توانائی بحران کے حل کیلئے بڑے آبی ذخائر کی تعمیرناگزیر ہے سستی اور وافر بجلی کے لیے کالا باغ ڈیم کی طرف رجوع کیا جائے ،کول پاور پلانٹ اور پاور پلانٹ سے حاصل شدہ مہنگی بجلی عوام اور صنعتکاردونوں کے مفادات کے خلاف ہے اس لیے سستی بجلی کے حصول کیلئے پن بجلی منصوبوں کی طرف توجہ دی جائے جن میں کالا باغ ڈیم قابل عمل اور واپڈا کے جلد پائیہ تکمیل ہونے والے منصوبوں میں شامل ہے اس کی تعمیر سے3600میگا واٹ اڑھائی روپے یونٹ والی بجلی سسٹم میں آئے گی نیز دریاؤں میں زراعت کیلئے ساراسال پانی دستیاب رہے گا ۔ا س لیے اس کی تعمیر کیلئے راہ ہموار کی جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1