ایپکا کاآج پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا دینے اعلان

ایپکا کاآج پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا دینے اعلان

  



لاہور( خبر نگار) آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن نے حکومتی یقین دہانی کے باوجود مطالبات پورے نہ ہونے کیخلاف آج ( پیر) کو صوبہ بھر کے سرکاری دفاتر میں تالہ بندی کر کے پنجاب اسمبلی کے سامنے مال روڈ پر دھرنا دینے کا اعلان کر دیا ۔ایپکا پنجاب کے صدر حاجی ارشد نے گزشتہ روز میڈیا کو بتایا کہ سید زعیم حسین قادری نے بطور ترجمان حکومت 9مئی کو ہمارے مطالبات تسلیم کرنے کی یقین دہانی کراتے ہوئے دھرنا ختم کرایا تھا لیکن ایک ماہ سے زائد کا وقت گزرنے کے باوجود ہمارے مطالبات تسلیم کرنے کیلئے عملی طور پر کوئی اقدام نہیں کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ آج پیر کے روز تمام سرکاری دفاتر میں تالہ بندی کی جائے گی اور صوبہ بھر سے سرکاری ملازمین پنجاب اسمبلی کے باہر دئیے جانے والے دھرنے میں شرکت کے لئے لاہور پہنچیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ گریڈ 1تا16تک تمام کیڈرز کے ملازمین کی اپ گریڈیشن، پنجاب کا دیگر صوبوں کے مقابلے میں تنخواہوں میں ساڑھے سات فیصد فرق کو ختم کیا جائے اور 2013ء سے اس مد میں بقایا جات کی ادائیگی کی جائے ۔ تمام سرکاری محکموں میں کنٹریکٹ اور ڈیلی ویجز ملازمین کو مستقل کیا جائے۔ خیبر پختوانخواہ اور بلوچستان کی طرز پر گروپ انشورنس کی رقم ریٹائرمنٹ پر یکمشت ادا کی جائے ۔ تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافے کی تجویز مسترد کرتے ہیں حکومت اراکین اسمبلی کی طرز پر تنخواہوں میں اضافے کا اعلان کرے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے سہ پہر چار بجے بجٹ کرنا ہے اس کا وقت ہے کہ بجٹ سے پہلے مطالبات تسلیم کر کے اس کا نوٹیفکیشن جاری کر دے ۔انہوں نے کہا کہ مطالبات کے حق میں صبح دس بجے سے دھرنا دیا جائے گا اور آئندہ کے لائحہ عمل کا فیصلہ احتجاج کے دوران کریں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4