اساتذہ نے دھرنا رمضان کے احترام میں ختم کیا ،مشترکہ بیان

اساتذہ نے دھرنا رمضان کے احترام میں ختم کیا ،مشترکہ بیان

  



َلاہور(خبرنگار) پنجاب ٹیچرز یونین کی سپریم کونسل کے قائدین چیئرمین رائے غلام مصطفی ریاض ، صدر اللہ بخش قیصر ، وائس چیئرمین عبداللطیف شہزاد، مرکزی صدر یونائیٹڈ ٹیچرز یونین اشفاق نسیم ، چوہدری نذیر گوندل ودیگرنے ایک بیان میں کہاہے کہ چار روزہ دھرنا کامیاب مگر مذاکرات نام ، رمضان المبارک کے احترام میں دھرنا ختم کیا گیا ہے حکومت نجکاری پر ڈٹی ہوئی ہے کامیاب سکولوں کو دانش اتھارٹی کے حوالے کرکے تعلیمی پالیسی سبوتاژ کرنے کی کوشش کر رہی ہے ۔

لاہور کے تیرہ کامیاب ترین ہائی سکولوں کو دانش اتھارٹی کے حوالے کرنا محکمہ تعلیم کے حوالے کرنا نہیں تو اور کیا ہے ۔ حکومتی ترجمانوں نے مذاکرات کے دوران جھوٹے وعدے وعید کئے اور نجکاری پر ڈٹے رہے ۔ جبکہ اساتذہ رہنماؤں نے نجکاری کے خلاف صدائے احتجاج جاری رکھی ۔ان کا عز م ہے کہ اگر سیکرٹری تعلیم سے میٹنگ میں نجکاری کا فیصلہ نہیں ہوتا تو پنجاب بھر سے اساتذہ لاہور میں ایک بار پھر دنگل لگائیں گے اور حکومت پنجاب کے ساتھ نجکاری کے خلاف صوبہ بھر میں تحریک چلائیں گے ۔ جو کہ اپنے مقاصد حاصل کرنے تک جاری رہے گی ۔ اس ضمن میں احتجاجی دھرنا ، تعلیمی بائیکاٹ اور ہڑتال شامل ہوگی ۔ حکومت پنجاب کا یہ فیصلہ صوبہ کے غریب لوگوں کو تعلیم سے محروم کرنے کی کوشش ہے ۔ انہوں نے الزام لگایا کہ حکومت احتجاجی اساتذہ کے خلاف کاروائی کا پروگرام بنا رہی ہے ۔ ہم اپنے موقف پر ڈٹے ہوئے ہمیں حکومتی دھمکیاں اپنے موقف سے نہیں ہٹا سکتیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4