2010ء کے سیلاب میں تباہ ہونیوالی رابطہ سڑک تاحال تعمیر نہ ہوسکی

2010ء کے سیلاب میں تباہ ہونیوالی رابطہ سڑک تاحال تعمیر نہ ہوسکی

خان پوربگاشیر(نمائندہ پاکستان)2010کے سیلاب میں تباہ ہونے والے سینکڑوں گھروں کو شہر سے ملانے والا لنک روڈ تاحال تعمیر نہ ہوسکا جگہ جگہ گڑھے اور دھول عوام کا مقدر بن گئی تفصیلات کے مطابق 2010کے تباہ کن تباہ کاریوں کی وجہ سے خان پوربگاشیر چوک سے ٹھٹھہ سیالاں براستہ مہین(بقیہ نمبر22صفحہ12پر )

شاہ والا کالی پل جانے والا لنک روڈجسکو مقامی افراد بطورایمرجنسی مجبوری استعمال کرتے ہیں مگرسٹرک کا حال ایسا شرم ناک ہو چکا ہے کہ 10منٹ کا فاصلہ 40سے50 منٹ میں طے ہونے لگا۔جگہ جگہ گڑھے اور دھول کی وجہ سے عوام کا سانس لینا دشوار ہوچکا ہے جبکہ روڈ کی ٹوٹ پھوٹ کی وجہ سے ذہنی اذیت اورکوفت کا شکار ہیں۔اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ مقامی ایم پی اے نے الیکشن سے قبل روڈ کی تعمیرکا وعدہ کیا تھا جوکہ وہ تاحال وفا ء نہ کرسکے۔ جبکہ انتظامیہ نے سیلا ب سے تباہ ہونے والے لنک روڈ زکیلئے دیئے گئے فنڈ بھی انتظامیہ نے ہڑپ کر لئے ہیں شہری سید مرید عباس شاہ گدی والے،سید الیاس شاہ،سید خضر عباس شاہ،ملک سعید احمد تھہیم ،ملک اشرف ماڑہ،پنو ں شاہ ،خان محمد گل ،راشد نواز خان سدوزائی ودیگرمکینوں نے وزیر اعلی پنجاب، ڈی سی اومظفرگڑھ اور مقامی ایم پی اے سے روڈ کی تعمیرکا بھرپور مطالبہ کیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر