گراں فروشوں اور ذخیرہ اندوزوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائیگا :قلندر لودھی

گراں فروشوں اور ذخیرہ اندوزوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائیگا :قلندر لودھی

  



پشاور( پاکستان نیوز)خیبرپختونخوا کے وزیر خوراک حاجی قلندرخان لودھی نے کہا ہے کہ رمضان کے دوران منافع خوروں ،گراں فروشوں ذخیرہ اندوزوں ،ملاوٹ اور مصنوعی مہنگائی کرنے والے عناصر کو غریب عوام کاخون پینے کی کسی قیمت پر اجازت نہیں دی جائے گی تاہم انہوں نے بلدیاتی نمائندوں محکمہ خوراک اورضلعی انتظامیہ کے افسران کوہدایت کہ مستقل طورپر ان افراد کی چیکنگ کی جائے اوران کے کاروباری مراکز اور دکانوں کی نمایا ں جگہ پر نرخنامے آویزاں کیے جائیں بصورت دیگر خلاف ورزی کرنے والوں پر بھاری جرمانے عائد کرنے کے علاوہ دیگر سزائیں بھی دی جائینگی۔انہوں نے یہ ہدایا ت یونیورسٹی ٹاؤن، بورڈ بازار اور فیزتھری فلائی اور حیات آباد پشاور کے اچانک دورے کے موقع پر مختلف بازاروں ،مارکیٹوں اوردکانوں میں نرخنامے اوراشیائے خوردنی کے نرخ اورمعیار کی جانچ پڑتال کے موقع پر موجود لوگوں اور میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے جاری کیں۔ اس موقع پر سیکرٹری خوراک عصمت اللہ خان گنڈہ پور، ڈائریکٹر خوراک اوراسسٹنٹ کمشنر پشاورکے علاوہ محکمہ خوراک ضلعی انتظامیہ اور پولیس کی بھاری نفری بھی ان کے ہمراہ تھی۔ صوبائی وزیر نے دورے کے دوران یونیورسٹی ٹاؤن سے فیز تھری فلائی اور حیات آباد پشاور تک کے علاقوں میں قائم مختلف جنرل سٹوروں ،بیکریوں ،مٹھائی ،سبزی اور فروٹ فروشوں ،قصابوں ،دودھ اوردیہی کاکاروبار کرنے والوں ،ریسٹورنٹ اورہوٹلوں پراچانک چھاپے مارے اور گراں فروشی ،نرخنامے آویزان نہ کرنے صفائی ستھرائی کا ناقص بندوبست ،دکانوں پرپڑی اشیاء کو نہ ڈھانپنے،جالیاں نہ لگانے اور غیر معیاری اشیاء خوردونوش فروخت پر مختلف دکانداروں بشمول شیرین محل یونیورسٹی ،شیش محل سویٹ اینڈبیکرز ،اسلامیہ ریسٹورنٹ زم زم قصاب بورڈ بازار ،اتنظامیہ عباس قصاب ،مرغی والا فیض محمد انصاف سپرسٹور ، ریڑھی والا، افغان صداقت جوس اینڈ کولڈ ڈرنکس کے مالکان کو اعلیٰ الترتیب 40,40 ہزار ،15 ہزار ،25 ہزار ،10 ہزار15 ہزار12 سو اور10 ہزار روپے جرمانہ کیاگیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ محکمہ خوراک گندم کی خریداری کے علاوہ بڑی مستعدی سے بازاروں کی چیکنگ کررہاہے اگرچہ یہ عمل صارفین کے لئے پور ے سال جاری رکھا جاتاہے تاہم رمضان کے مہینے میں یہ کمیٹیاں انتظامیہ کے ساتھ مل کر پورے صوبے میں چھاپے مارتی ہے صبح سویرے سبزی اورفروٹ کانرخنامہ ترتیب دینے کے لئے منڈیوں میں جاتی ہیں اور اپنی موجودگی میں بولی کرواتی ہے تاکہ صارفین کو کم سے کم نرخ پر اشیائے ضروریہ میسر آسکیں ۔انہوں نے تاجر پیشہ افراد کو درخواست کی کہ وہ رمضان کے تقدس کے پیش نظر اجناس کی قیمتوں میں خودساختہ اضافہ سے اجتناب کریں بلکہ اس مبارک مہینہ کی برکات سمیٹنے کی خاطر وہ مقررہ نرخوں سے بھی کم داموں پر اشیائے خوردنوش فروخت کریں تاکہ اللہ تعالیٰ کی خوشنودی اور اس کی رضاحاصل ہو۔ صوبائی وزیر نے بتایا کہ محکمہ نے 30 مئی 2016 کو نئے نرخنامے جاری کردیئے تھے جو ہردکان پر آویزاں ہونالازم ہے تاہم انہوں نے کہاکہ چھاپوں کی مہم صوبے کے دوسرے اضلاع میں بھی جاری رہیگی۔ انہوں نے ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کے نمائندوں کو اس ضمن میں اہم کردار اداکرنے اورمصنوعی مہنگائی کرنے والے عناصر کے خلاف بھرپور کاروائی عمل میں لانے کی تلقین کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر