ایف پی سی سی آئی خواتین کو با اختیار بنانے کا خواہاں ہے،رؤف عالم

ایف پی سی سی آئی خواتین کو با اختیار بنانے کا خواہاں ہے،رؤف عالم

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)ایف پی سی سی آئی کے صدر عبدالرؤف عالم نے کہا ہے کہ ملک کے روشن مستقبل کیلئے خواتین کو سماجی اور معاشی طور پر با اختیار بنانا چاہتے ہیں اور اس سلسلہ میں کام کرنے والے تمام اداروں سے بھرپور تعاون کرینگے۔ حکومت پاکستان نے خواتین کی ترقی کیلئے مثبت اقدامات کئے ہیں تاہم اس سلسلہ میں بین الاقوامی برادری کو بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔ ایف پی سی سی آئی کے صدر عبدالرؤف عالم نے یہ بات کوریا میں اقوام متحدہ کے تحت انٹرنیٹ تک رسائی کے زریعے خواتین کو با اختیار بنانے کے ایک بین الاقوامی کنونشن میں مختلف ممالک سے آنے والی شرکاء سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔انھوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کا وائی فائی پروگرام قابل تعریف ہے جس پر پاکستان میں سینٹر برائے پاکستان اور بین الاقوامی تعلقات کے زریعے عمل درامد کیا جائے گا تاکہ مختلف ویمن چیمبروں اور دیہی خواتین کا معیار زندگی بلند کیا جا سکے۔ انھوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں ایف پی سی سی آئی اور اس ادارے کی صدر آمنہ ملک کے مابین معاہدہ ہو چکا ہے۔ انھوں نے کہا کہ خواتین کو سماجی اور اقتصادی بور پر با اختیار کرنے سے انکی زات کے علاوہ انکے خاندان، معاشرے اور ملکی معیشت میں انقلاب آ سکتا ہے۔ خواتین اپنی آمدنی کو سب سے پہلے اپنے بچوں کی صحت اور تعلیم پر لگاتی ہیں جس سے ملکی ترقی کی رفتار بڑھتی ہے۔ تعلیم بڑھنے سے معاشرے میں منفی رجحانات میں تیزی سے کمی آتی ہے۔دنیا کی نصف آبادی خواتین پر مشتمل ہے جنکی اقتصادی کمزوری عالمی ترقی کی رفتار بڑھانے میں رکاوٹ ہے جسے ہم سب مل کر دور کرینگے۔ اس موقع پر بہت سی بین الاقوامی کمپنیوں بشمول گوگل، مائیکروسافٹ اور انٹیل کے نمائندوں نے حاضرین کو بنایا کہ وہ کس طرح انفارمیشن ٹیکنالوجی کی مدد سے خواتین کی حالت بدلنے میں اپنا کردار ادا کر سکتی ہیں۔ کنونشن میں پچاس سے زیادہ ممالک کے سرکاری حکام، سول سوسائٹی، نجی شعبہ کے نمائندوں اور کمپنیوں نے شرکت کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر