محکمہ خوراک نوہشہرہ نے صوبائی حکومت کرپشن فری خیبرپختونخوا پالیسی کی دھجیاں اڑا دیں

محکمہ خوراک نوہشہرہ نے صوبائی حکومت کرپشن فری خیبرپختونخوا پالیسی کی دھجیاں ...

نوشہرہ(بیورورپورٹ) محکمہ خوراک نوشہرہ نے صوبائی حکومت کی کرپشن فری خیبرپختونخوا پالیسی کی دھجیاں اڑا دی گندم کی خریداری میں محکمہ خوارک نوشہرہ کے اہلکاراور افسران نے مقامی زمینداروں اور کاشتکاروں سے کمیشن وصول کرنے کا سلسلہ شروع کرکے رشوت خوری کے ذریعے زمینداروں کے مشکلات میں اضافہ کرکے انت مچادی ہے ان خیالات کااظہارناظم ویلج کونسل نواں کلے حاجی اعجاز خان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ محکمہ خوراک نوشہرہ کے اہلکار اور افسران نے گندم خریداری کے مدمیں زمینداروں کا جینا حرام کردیا ہے پہلے تو محکمہ خوراک نوشہرہ زمینداروں سے گندم خریدنے کی موڈ میں نہ تھے اور زمینداروں کو یہ صاف انکار کرچکے تھے اور کہا تھا کہ ہم گندم نہیں خرید سکتے لیکن پھربھی وزیراعلیٰ پرویز خٹک کی فوری کاروائی پر محکمہ خوراک نوشہرہ کے افسران اور اہلکاروں نے زمینداروں سے گندم کی خریداری تو شروع کردی لیکن محکمہ خوراک کے کلرک غفار کے ذریعے گندم کی خریداری میں فی کس زمیندار سے ہزاروں روپے کمیشن وصول کررہے ہیں جو کہ ان غریب زمینداروں پر بوجھ ہے اور دوسری طرف محکمہ خوراک نوشہرہ کے اہلکار اور افسران صوبائی حکومت بلخصوص وزیراعلیٰ پرویز خان خٹک کے کرپشن فری خیبرپختونخوا کے مشن پر پانی پھیررہے ہیں جس کی ہم مذمت اور مزاحمت دونوں کیلئے تیار ہیں کیونکہ نہ ہم پی ٹی آئی کے کارکن کرپٹ ہے اور نہ ہمارے قائدین کرپٹ ہے تو پھر نوشہرہ کے سرکاری محکمہ خورا ک میں بھی کسی کرپٹ اہلکار چاہے وہ غفار کلرک ہو یا ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر ہوں ہرکسی کے خلاف بلاامتیاز کاروائی ہوگی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر