پھلوں اور گوشت کی قیمتیں، سرکاری احکامات ہوا میں اڑا دیئے گئے، منہ مانگے داموں فروخت جاری

پھلوں اور گوشت کی قیمتیں، سرکاری احکامات ہوا میں اڑا دیئے گئے، منہ مانگے ...
پھلوں اور گوشت کی قیمتیں، سرکاری احکامات ہوا میں اڑا دیئے گئے، منہ مانگے داموں فروخت جاری

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) کمشنر کراچی نے 13 جون کیلئے اشیائے ضروریہ کی پرائس لسٹ جاری کر دی ہے تاہم اس کے برعکس کاندار اپنی مرضی کے دام وصول کرنے میں مصروف ہیں۔ نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق پرائس لسٹ میں کیلا فی درجن 87 روپے مقرر کیا یا ہے لیکن بازار میں درجہ اول کیلا 110ر وپے تک فروخت ہو رہا ہے۔ سندھڑی آم کی قیمت میں گزشتہ 2 روز کے دوران 11 روپے فی کلو اضافہ ہوا ہے اور اس کے سرکاری نرخ 110 روپے فی کلو مقرر کئے گئے ہیں لیکن بازار میں یہ 120 سے 140 روپے تک فروخت کیا جا رہا ہے۔ درجہ اول تربوز فی کلو 33 روپے مقرر کیا گیا ہے لیکن بازار میں یہ فی کلو 35 سے 40 روپے میں فروخت کیا جا رہا ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

گرما کے سرکاری نرخ 81 روپے فی کلو مقرر کئے گئے ہیں لیکن بازار میں یہ 90 روپے میں فروخت کیا جا رہا ہے۔ لنگڑا آم کی قیمت فی کلو 77 روپے مقرر کی گئی ہے لیکن بازار میں 80 سے 90روپے فی کلو فروخت جاری ہے۔ سیب گولڈن فی کلو 110 روپے مقرر ہوا لیکن بازار میں 150 سے 200 روپے فی کلو فروخت ہورہا ہے۔

ایک جانب پھلوں اور سبزیوں کی من مانی قیمتیں وصول کی جا رہی ہیں تو دوسری جانب برائیلر مرغی کا گوشت بیچنے والے بھی کسی سے پیچھے نہیں ہیں۔ آل پاکستان پولٹری ڈیلرز ایسوسی ایشن نے رمضان المبارک کے آغاز سے قبل سندھ حکومت کو یقین دہانی کرائی تھی کہ ماہ مبارک کے دوران گوشت 200 روپے فی کلو کے حساب سے وصول کیا جائے گا لیکن بعدازاں انہوں نے حکومت نے جھنڈی دکھاتے ہوئے 250 روپے فی کلو میں فروخت شروع کر دی۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

گزشتہ 2 روز میں برائیلر مرغی کے گوشت میں 12 روپے کمی کر کے ریٹ 226 روپے فی کلو مقرر کیا گیا ہے جبکہ برائیلر مرغی 8 روپے سستی ہو کر 146 روپے فی کلو کر دی گئی ہے لیکن یہ حکومت کے ساتھ طے کئے گئے نرخ سے ابھی بھی زیادہ ہے اور انتظامیہ بھی اس معاملے میں اپنی رٹ قائم کرنے میں ناکام ہو گئی ہے۔

مزید : بزنس