راجستھان میں کروڑوں سال پرانی ایسی چیز دریافت کہ سائنسدان بھی دنگ رہ گئے

راجستھان میں کروڑوں سال پرانی ایسی چیز دریافت کہ سائنسدان بھی دنگ رہ گئے
راجستھان میں کروڑوں سال پرانی ایسی چیز دریافت کہ سائنسدان بھی دنگ رہ گئے

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) کروڑوں سال قبل کرہ ارض سے معدوم ہو جانے والے دیو قامت جانور ڈائنوسار کے بھارت میں ملنے والے آثار نے سائنسدانوں کو حیران کردیا ہے۔ اخبار ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارت کے ضلع جیسل میر میں تحقیق کاروں کو تھائی یات کے علاقے میں یو برونٹس گلینے رون سینسس تھیرو پوڈ ڈائنوسار کے پیروں کے نشان ملے ہیں۔ جین آرین ویاس یونیورسٹی جودھ پور کے تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ ڈائنوسار کے پیروں کے نشان 15کروڑ سال پرانے ہیں۔ ڈائنوسار کے پیروں کے نشان تقریباً 30 سینٹی میٹر لمبے ہیں، جس کی بناءپر سائنسدانوں نے اندازہ لگایا ہے کہ اس کی بلندی ایک سے تین میٹر اور لمبائی 5 سے 7میٹر رہی ہوگی۔

لاہور میں موجود انارکلی کی قبر پر جہانگیر نے ایسا کون سا فقرہ لکھوا دیا تھا کہ پڑھ کر لوگ آج بھی حیران ہو جاتے ہیں

اسی قسم کے ڈائنوسار کے فوسلزاس سے پہلے فرانس، پولینڈ، سلوواکیا، اٹلی، سپین، سویڈن، آسٹریلیا اور امریکا میں بھی مل چکے ہیں۔ بھارت میں اس سے پہلے ڈائنوسار کے انڈے، ہڈیاں اور دانت بھی دریافت ہوچکے ہیں لیکن اس کے پیروں کے نشان پہلی دفعہ ملے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس