لیبیا میں داعش کے قبضے سے چھڑائے جانے والے سکول کے ٹوائلٹ سے ایسی چیز برآمد کہ مغربی ممالک خوف میں ڈوب گئے، سکیورٹی اداروں میں شدید پریشانی

لیبیا میں داعش کے قبضے سے چھڑائے جانے والے سکول کے ٹوائلٹ سے ایسی چیز برآمد ...
لیبیا میں داعش کے قبضے سے چھڑائے جانے والے سکول کے ٹوائلٹ سے ایسی چیز برآمد کہ مغربی ممالک خوف میں ڈوب گئے، سکیورٹی اداروں میں شدید پریشانی

  



تریپولی (مانیٹرنگ ڈیسک) لیبیا میں خانہ جنگی کے باعث لوگ ہزاروں کی تعداد میں بحیرہ روم کو پار کرکے یورپ جارہے ہیں لیکن اب ان پناہ گزینوں میں داعش کے جنگجو بھی شامل ہوگئے ہیں، جو اپنا روپ بدلنے کے لئے ایک نئی چال چل رہے ہیں۔

اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق حال ہی میں انکشاف ہوا ہے کہ ساحلی شہد سرتی میں لیبیائی افواج کی برطانوی ایلیٹ فورسز کی حمایت کے ساتھ پیش قدمی کے بعد داعش کے جنگجوﺅں نے بڑی تعداد میں اس شہر کو چھوڑنا شرو ع کردیا ہے۔ یہ جنگجو اپنا حلیہ بدل کر یورپ جانے والے پناہ گزینوں میں شامل ہورہے ہیں۔ یہ انکشاف اس وقت ہوا جب لیبیائی افواج وادی جریف کے علاقے میں ا یک سکول میں پہنچیں، جہاں 100 سے زائد جنگجو چھپے ہوئے تھے۔ جب لیبیائی افواج اس علاقے میں داخل ہوئیں تو یہ جنگجو فرار ہو چکے تھے، مگر سکول کے ٹوائلٹس میں ایسے مناظر نظر آئے کہ جن سے جنگجوﺅں کی نئی حکمت عملی سامنے آ گئی۔ لیبیائی فوج کے کرنل محمد الغسری بتایا کہ ٹوائلٹس میں کٹے ہوئے بالوں کے گچھے بھرے پڑے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس سے پہلے بھی یہ اطلاعات موجود تھیں کہ جنگجو اپنی داڑھیاں مونڈھ کر عام لیبیائی باشندوں کا روپ دھار کر یورپ فرار ہورہے تھے، مگر اب اس بات کی تصدیق ہو گئی۔

’مجھے ہلکا سا مارو‘ اسلامی نظریاتی کونسل کے مطالبے کا پاکستانی لڑکیوں نے انٹرنیٹ پر انتہائی دلچسپ جواب دے دیا

برطانوی فوجی ذرائع کا بھی کہنا ہے کہ جنگجوﺅں کی بڑی تعداد اپنا حلیہ بدل کر اٹلی اور سسلی کی جانب فرار ہورہی ہے۔ ان جنگجوﺅں کے انسانی سمگلروں سے بھی قریبی تعلقات بتائے گئے ہیں جو انہیں فرار میں مدد دے رہے ہیں۔ یورپی حکام کا کہنا ہے کہ جنگجوﺅں کے نئے حربے نے ان کے لئے بہت بڑی مشکل کھڑی کردی ہے اور یورپی ممالک کے امن وامان کے لئے سنگین خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس