خلیج بحران ، وزیر اعظم کی شاہ سلیمان سے جدہ میں ملاقات : جنرل باجوہ ، اسحاق ڈار ، سرتاج عزیز موجود تھے

خلیج بحران ، وزیر اعظم کی شاہ سلیمان سے جدہ میں ملاقات : جنرل باجوہ ، اسحاق ...

جدہ،اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) سعودی عرب اور قطر کے مابین جاری کشیدگی کے خاتمے کے مشن پر جدہ پہنچنے والے وز یر اعظم نواز شریف نے وفد کے ہمراہ خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان سے ملاقات کی جس میں خلیجی ممالک کے درمیان جاری کشیدگی او ر تنا ؤ سمیت خطے اور عالمی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ وزیر اعظم نے برادر اسلامی ممالک میں پائے جانیوالے اختلافات کے خا تمے میں پاکستان کی ثالثی کے کرادار اداکرنے کی پیشکش کیساتھ ساتھ بحران کے حل کیلئے سعودی فرمانروا کواس ضمن میں تجاویز بھی دیں ، سعو دی شاہ فرمان نے پاکستان کی پیشکش اور تجاویز کا خیر مقدم کیا ، ذرائع کا کہنا ہے اگر ملاقات میں اہم پیش رفت ہوئی تو وزیراعظم قطر اور متحدہ کا دورہ بھی کرسکتے ہیں اورچاہتے ہیں پاکستان دونوں ممالک میں ثالثی کا کردار ادا کرے۔ قبل ازیں وزیر اعظم ملاقات کرنے کیلئے اپنے و فد جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ، وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور مشیر خارجہ سرتاج عزیز شامل تھے کے ہمراہ رائل پیلس پہنچنے کو خود سعو د ی فرمانروا شاہ سلمان نے ا ستقبال کیا ۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نواز شریف اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ قطر سعودی تنازع میں مصا لحت کیلئے جدہ پہنچے تو گورنرمکہ شہزادہ فیصل بن عبدالعزیز نے ایئرپورٹ پر استقبال کیا،سعودی عرب روانگی سے پہلے وزیراعظم نواز شریف نے اپنی زیر صدارت سعودی عرب ، متحدہ عرب امارات اور قطر میں تعینات سفیروں کے اجلاس کی صدارت کی اور خلیجی بحران سمیت دیگر متعلقہ امور پر بریفنگ لی ،تینوں سفیر اجلاس میں شرکت کیلئے خصوصی طور پر پاکستان پہنچے تھے ، جبکہ اجلاس میں مشیر خارجہ سرتاج عزیز، سیکریٹری خارجہ اور دیگر حکام شریک بھی ہوئے، کانفرنس میں خلیجی ممالک میں جاری حالیہ تناؤ پر تفصیلی بات چیت کی گئی، اجلاس میں برادر اسلامی ممالک کے مابین جاری بحران کے حل کیلئے ثالثی کا کردار اداکرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ، اس موقع پر وزیر اعظم کا کہنا تھا پاکستان کو خلیج بحران پر تشویش ہے، خواہش ہے سعودی عرب اور قطر بات چیت کے ذریعے معاملات طے کریں۔ پاکستان برادر اسلامی ملکوں کے درمیان تناو ختم کرنے کیلئے مخلصانہ کردار ادا کرنا چاہتاہے۔پاکستان کے سعو دی عرب سمیت تمام خلیجی ممالک سے گہرے برادرانہ اور دوستانہ تعلقات ہیں اور اسلامی ملکوں کے در میا ن غلط فہمیوں اور تناو کی صور تحا ل ختم اور انکے مابین تعلقات کوبہتر بنانے کی کوشش کرنا چاہتا ہے۔ مسلم ممالک اختلافات چھوڑ کر ایک ہو جائیں کیونکہ امت کی خوشحالی کا سفر متحد ہو کر ہی طے ہو سکتا ہے۔ وزیراعظم کا دورہ خلیجی ممالک میں پیدا ہونیوالی صورتحال کے تناظر میں ہے، دورے کے اگلے مرحلے میں وزیراعظم کا قطر اور متحدہ عرب امارات جانے کا بھی امکان ہے۔ پیر کو نور خان ایئر بیس پر اعلیٰ حکام نے وزیر اعظم اور آرمی چیف کو الوداع کیا ۔سعودی عرب میں دو روزہ قیام کے دوران کے دوران فریقین سے تنازعے کے خاتمے کے حوالے بات کریں گے، سعودی عرب،قطر اور متحدہ عرب امارات کی سیاسی اور عسکری قیادت سے بھی بات چیت ہو گی ۔

وزیر اعظم /شاہ سلمان ملاقات

مزید : صفحہ اول