نیند میں خلل موٹاپے کا سبب بن سکتا ہے‘ نیند پوری ہونے سے ہارمونز میں توازن رہتا ہے‘ ڈاکٹر کامران

نیند میں خلل موٹاپے کا سبب بن سکتا ہے‘ نیند پوری ہونے سے ہارمونز میں توازن ...

ملتان(وقائع نگار) نیند میں خلل موٹاپے کا سبب بن سکتا ہے اور سوشل میڈیا یا سماجی تقریبات کی وجہ سے رات دیر تک مصروف رہنا نیند کی خراب کی بڑی وجوہات ہیں۔وہ لوگ جن کی نیند(بقیہ نمبر18صفحہ12پر )

اکثر پوری نہ ہو سکے یا جنہیں نیند خراب ہونے کی شکایت رہتی ہو، ایسے افراد کے موٹاپے میں مبتلا ہونے کے امکانات دیگر صحت مند افراد کی نسبت کہیں زیادہ ہوتے ہیں۔ ڈاکٹر کامران خان کا کہنا ہے کہ اگر روزانہ معمول کے مطابق نیند پوری ہوتی رہے تو مختلف ہارمونز کے درمیان توازن قائم رہتا ہے لیکن اگر نیند پوری نہ ہو یا مسلسل متاثر رہنے لگے تو ہارمونز میں توازن بھی بگڑ جاتا ہے جس کا اثر دوسرے کئی جسمانی نظاموں پر پڑتا ہے۔ ڈاکٹر کامران خان کے مطابق نیند کی خراب کی بڑی وجہ سوشل میڈیا پر رات دیر تک مصروف رہنا اور دیر تک جاری رہنے والی سماجی تقریبات ہیں۔ ان حقائق کی روشنی میں ڈاکٹر کامران خان نے مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر آپ اپنے موٹاپے پر قابو پانا چاہتے ہیں تو سب سے پہلے پوری اور بھرپور نیند سونے کی عادت ڈالنا ہوگی تاکہ ہارمونز میں توازن بحال ہو ۔

ڈاکٹر کامران

مزید : ملتان صفحہ آخر