جمشید دستی گرفتاری کیخلاف احتجاج کا سلسلہ جاری ، تیل سپلائی بند ، نہریں توڑنے کی دھمکی

جمشید دستی گرفتاری کیخلاف احتجاج کا سلسلہ جاری ، تیل سپلائی بند ، نہریں ...

ملتان،کوٹ ادو،مظفرگڑھ،علی پور،عالی والا،خان پور(سٹی رپورٹر،نمائندگان)عوامی راج پارٹی کے سربراہ و رکن قومی اسمبلی جمشید دستی (بقیہ نمبر57صفحہ12پر )

کی گرفتاری اور پابند سلاسل کیے جانے کیخلاف چوتھے روز بھی احتجاج کا سلسلہ جاری رہا ملتان سے سٹی رپورٹر کے مطابق عوامی راج پارٹی کے سربراہ ورکن قومی اسمبلی جمشید دستی کی گرفتاری اور پابند سلاسل کئے جانے کے خلاف چو تھے روز بھی احتجاج کا سلسلہ جاری رہا اور جمشید دستی کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا اس سلسلے میں پاکستان سرائیکی پارٹی کے رہنما جاوید حسین چنڑ، پیپلز سرائیکی پارٹی کے چیئرمین ملک ذوالنورین بھٹہ، سرائیکی رہنما اللہ نواز وینس، پاسبان رکشہ یونین کے صدر میاں پرویز اقبال بودلہ کی قیادت میں گذشتہ روز عزیز ہو ٹل چوک پر جمشید دستی کی گرفتاری کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اس موقع پر مظاہرین نے جمشید دستی کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا اور اس موقع پر مقررین نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ جمشید دستی غریب ایم این اے ہے جو حقیقی معنوں میں مزدور، محنت کش، کسان، عوام اور وسیب کا مان ہے ،انہو ں نے کہا کہ جمشید دستی کو فوری طور پر رہا نہ کیا گیا تو سرائیکی خطہ کی قوم پرست سرائیکی جماعتیں بھرپور احتجاج پر مجبور ہو جائیں گی اور پھر ہر چوک، ہر روڈ پر مظاہرے ہو ں گے ۔کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق آل پاکستان آئل ٹینکرز اونرز ایسوسی ایشن کا ہنگامی اجلا س گزشتہ روزمنعقد ہوا ، جس کی صدارت سنٹرل چیئرمین میر محمد یوسف شاہوانی نے کی ،اجلاس میں آئل ٹینکرز رہنماؤں میں ، محمد شفیع مروت، ظریف مروت ، فرید اللہ مروت ، فیض اللہ آفریدی ، عبدالخالق مروت ، افضل بیٹی، پیر جواد بلال ،صادق مروت ، جاوید مسعو د، سعداللہ وزیر ، رحمان اللہ وزیر ، حاجی غلام علی مروت ، شاہ محمد برکی، حاجی بہاؤ الدین ، فیض اللہ مروت ، ولی الرحمن مروت ، یونس مروت، قیصار خان مروت، رائے سجاد، ساجد میکن، حاجی محمد اصغرشیخ ، عمران میتلا کے علاوہ سینکڑوں ٹینکرز مالکان نے شرکت کی ، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین میر محمد یوسف شاہوانی نے وضاحت کی ،ایسوسی ایشن جمشید احمد خان دستی کی مکمل حمایت کا اعلان کرتی ہے جب تک جمشید احمد خان دستی کی رہائی ممکن نہیں، اس وقت تک ہماری ایسوسی ایشن اپنا کردار اد ا کرتی رہے گی ۔ اگر جمشید احمد خان دستی کو فوری طور پر رہا نہ کیا گیا تو آئل ٹینکرز برادری پاکستان لیول پر تیل کی سپلائی مکمل طور پر بند کرنے پر مجبور ہوجائے گی۔دریں اثناء تھانہ چوک کرم داد قریشی میں عوامی راج پارٹی کے چیئرمین ورکن قومی اسمبلی جمشید خان دستی کے خلاف زبردستی نہر چالو کرنے کا مقدمہ نمبر277/17زیر دفعہ 16-149-148-353-186-382-506-430ایم پی او، 7اے ٹی اے 1997درج ہوا تھا اور اس مقدمہ میں تھانہ چوک سرور شہید کے علاقہ میں اسے گرفتار کیا گیا تھا،ایف آئی ار کے متن کے مطابقپولیس چوک سرور شہید نے بوقت گرفتاری رکن قومی اسمبلی جمشید خان دستی سے رائفل معہ 16گولیاں برآمد کی تھی جس ان کے خلاف ناجائز اسلحہ رکھنے کا مقدمہ نمبر 240/17زیر دفعہ Ao 13/20/65درج کر لیا گیا ہے۔مظفرگڑھ سے نامہ نگار کے مطابق ایڈیشنل سیشن جج مظفرگڑھ محمد ارشد انجم نے پاکستان عوامی راج پارٹی کے چیئر مین و رکن قومی اسمبلی جمشید احمد دستی کیخلاف تھانہ سٹی میں درج قتل کے مقدمہ میں درخواست ضمانت بعد از گرفتاری کی سماعت چودہ جون تک ملتوی کر دی جبکہ فاضل جج نے عدالت میں پیش ہونے والے مدعی مقدمہ کو ہدایت کی کہ وہ آئندہ پیشی پر اپنا وکیل پیش کرے۔تھانہ سٹی میں مدعی فیض الرحمن کے پتیمہ بیان پر جمشید دستی کو اعانت جرم کی دفعہ 109کے تحت نامزد کر رکھا ہے ۔ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں جمشید دستی کے وکلاء جام محمد یونس ایڈ ووکیٹ ،رانا امجد علی امجد ایڈووکیٹ ،شیر محمد کوارائی ایڈووکیٹ کے علاوہ صدر ڈسٹرکٹ بار مظفرگڑھ سید تصدق حسین بخاری، جنرل سیکرٹری ظفر بلال ،ظفر انصاری ایڈ ووکیٹ سمیت وکلاء کی بڑی تعداد موجود تھی ۔جبکہ عدالت کے باہر ڈی ایس پی سٹی ،ایس ایچ او سٹی اور پولیس کی نفری موجود تھی ۔جمشید دستی کیخلاف درج تھانہ قریشی میں نہری پانی کھولنے کے مقدمہ میں پولیس نے دہشت گردی کی دفہ 7ATAایزاد کر دی ۔دریں اثناء تھانہ سٹی مظفرگڑھ میں درج دو مقدمات میں درخواست ضمانت کی سماعت علاقہ مجسٹریٹ تھانہ سٹی مظفرگڑھ نعیم بخش کی عدالت میں ہوئی جس میں فریقین کے وکلاء کے بعد مجسٹریٹ نے درخواست ضمانت پر فیصلہ آج تک کے لیے محفوظ کر لیا ۔دریں اثناجمشید دستی کے وکلاء ممبر پنجاب بار کونسل جام محمد یونس ایڈ ووکیٹ ،مرکزی سیکرٹری اطلاعات رانا امجد علی امجد ایڈ ووکیٹ ،ضلعی رہنما چوہدری عامر کرامت ،ناصر چوہان ایڈ ووکیٹ ،محمد ایاز کھیڑا ،عاصم علی قریشی اور دیگر رہنماؤں نے پولیس کی طرف سے تھانہ قریشی کے مقدمہ میں دہشتگردی کے دفعہ لگانے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس پنجاب حکومت کے ایما پر غیر قانونی اقدامات کر رہی ہے ۔مظفرگڑھ سے نامہ نگار کے مطابق پولیس نے جمشید دستی کونیو سنٹرل جیل ملتان سے گزشتہ رات سینٹرل جیل ڈی جی خان منتقل کر دیا ان کو پیر کے روز انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کرنا تھا لیکن عدالتی وقت ختم ہونے تک انہیں پیش نہیں کیا گیا جبکہ دہشت گردی کی عدالت کے باہر پاکستان عوامی راج پارٹی کے عہدیدار ،کارکن اور وکلاء ان کا انتظار کرتے رہے ۔علی پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق علی پور ضلع بناؤ تحریک کے چیئرمین محمدایاز خان ایڈووکیٹ کے زیراہتمام ایم این اے جمشید خان دستی پر ناجائز مقدمہ پر علی پور بار میں وکلاء،صحافیوں ،سماجی وسیاسی شخصیات کا احتجاج، بجٹ کے دوران ساؤتھ پنجاب کی اہم پارٹی کے چیئرمین کی گرفتاری مسلم لیگ ن پر ایک سوالیہ نشان ہے۔ان کی گرفتاری سے بجٹ میں سرائیکی وسیب کی نمائندگی نہ ہونا سراسر زیادتی ہے ،ان کا جرم صرف اتنا ہے کہ انہوں نے کسانوں کیلئے ڈونگا نہر کھولی،کسانوں کو پانی نہ دے کر سراسر زیادی کی جارہی ہے۔عالیوالا سے نامہ نگار کے مطابق سیاسی سماجی رہنما ملک محمد رمضان جڑھ اور حاجی ساون خان سہرانی کی زیر قیادت ایم این اے جمشید دستی کی گرفتاری پر زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ علاقہ کے سیاسی سماجی اور مذہبی کارکنوں نے بھرپور شرکت کی۔ مظاہرے میں سینکڑوں افراد شریک تھے اور جمشید دستی کی رہائی کا فوری مطالبہ کر رہے تھے۔ مظاہرے کے شرکاء سے ملک محمد رمضان جڑھ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایم این اے جمشید دستی ایک فرد واحد کا نام نہیں بلکہ ستر سال سے قابض جاگیردار، وڈیرے، سردار، بھوتار اور موروثی نام نہاد سیاست دانوں کے خلاف تحریک کا نام ہے۔ زمیندار، کسان، مزدور اور غریبوں کی ٓواز بن چکا ہے۔ جمشید دستی پر جھوٹے حربے استعمال کیے جا رہے ہیں۔ مگر وہ کندن بن کر نکلیں گے۔ شرکاء احتجاج سے ساون خان سہرانی، حاجی عاشق خان صدقانی، مشتاق خان بروہی، محمد وسیم جسکانی ایڈووکیٹ، نوید خان گجر ملتان، سرائیکی انقلابی شاعر عاشق صدقانی، ملک عرفان جڑھ، کپتان محمد دلبر نے بھی خطاب کیا۔خان پور سے تحصیل رپورٹر کے مطابق عوامی راج پارٹی کے سربراہ کے مرکزی چیئر مین جمشید دشتی کی گرفتاری کے خلاف غازی پور میں عوام راج پارٹی کے ضلعی صدر اسماعیل بلوچ کی قیادت میں ریلی نکالی گئی اور شدید نعرے بازی کی گئی ۔مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اُٹھا رکھے تھے اور پلے کارڈ میں گو نواز گو کے نعرے درج تھے ۔عوام راج پارٹی کے ضلعی صدر اسماعیل بلوچ نے کہا کہ کسانوں کے لیے پانی کھولنا جرم ثابت ہو گیا انہوں نے کہا کہ اگر جمشید دشتی کو 24گھنٹے کے اندر رہا نہ کیا گیا تو ہم ساری نہروں کو توڑ دیں گے کے ایل پی روڈ بلاک کریں گے اور ریلوے لائن بلاک کر کے احتجاج کریں گے۔اس موقع پر حاجی ریاض احمد ،حاجی نواز حسین ،ملک ارشاد ،ذاکر حسین دشتی ،جام سلیم ،شہزاد خان دشتی ،عمران خان سانگھی ،فیاض کان رند،مدنی خان رند ،نواز خان دشتی ،ریاض احمد مکول،صدیق،نیازاحمد دشتی ،اقبال خان ،حمید خان دشتی ،امجد چانڈیہ،وسیم دشتی ،اکبر موہانہ سمیت دیگر مظاہرین نے شرکت کی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر