مریم نواز کے بیٹے جنید صفدر کی قیادت میں پاکستانی ٹیم کو انگلینڈ میں شکست لیکن پھر بھی وہ مین آف دی ٹورنامنٹ کا اعزاز لے اڑے ،وہ کونسے کھیل میں پاکستان کی نمائندگی کر رہے تھے ؟جان کر پاکستانیوں کا منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

مریم نواز کے بیٹے جنید صفدر کی قیادت میں پاکستانی ٹیم کو انگلینڈ میں شکست ...

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے بیٹے جنید صفدر کی زیر قیادت پاکستانی طلبہ کی پولو ٹیم گزشتہ روز برطانیہ میں پولو کے تاریخی میدان میں 4راﺅنڈز میں سخت مقابلے کے بعد برطانوی ٹیم سے شکست کھا گئی، سینکڑوں افراد نے یہ سنسنی خیز میچ دیکھا، پاکستانی اور برطانوی طلبہ کی پولو ٹیموں کے درمیان اس میچ کا اہتمام سکولز اور یونیورسٹیز پولو ایسوسی ایشن نے کیا تھا، جنید صفدر نے پاکستانی ٹیم کی قیادت کی جبکہ ٹیم میں جنید صفدر جو یونیورسٹی کالج لندن میں زیر تعلیم ہیں کے علاوہ سرے یونیورسٹی کے صوفی ہارون اور رائل ایگریکلچرل یونیورسٹی کے تیمور ہارون شامل تھے۔ پاکستان کے ڈپٹی ہائی کمشنر زاہد حفیظ چوہدری اس موقع پر مہمان خصوصی تھے اور انہوں نے کھلاڑیوں میں ان کی ذاتی اور گروپ پرفارمنس کی بنیاد پر انعامات تقسیم کئے، میچ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر جنید صفدرکو مین آف دی ٹورنامنٹ قرار دیاگیا، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ انہوں پولو کھیلنا پاکستان سے شروع کیا اوراپنے فیملی کے لوگوں سے اس میں مہارت حاصل کی۔

نجی نیوز چینل جیو نیوزسے بات کرتے ہوئے جنید صفدر نے کہا کہ اگرچہ ہم میچ ہار گئے لیکن یہ میچ مجموعی طورپر بہت دلچسپ تھا اور کھیلوں میں ہار جیت تو ہوتی رہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ پہلاموقع ہے کہ پاکستانی طلبہ نے بین الاقوامی سطح کی یونیورسٹی کے طلبہ کے مقابلے میں آئے ہیں۔جنید صفدر نے کہا کہ ہم اب اس طرح زیادہ مقابلوں میں شرکت کویقینی بنانے کی کوشش کریں گے ۔ہم برٹش پاکستانیوں کو میچ اور ان میں پاکستانی طلبہ کی کارکردگی دیکھنے کی دعوت دیں گے ۔انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان میں کھیلے جانے والے معروف شندور پولو مقابلوں کی طرح کامیچ تھا یہ پاکستانی ٹیلنٹ کے مظاہرے کاموقع تھا اور ہم نے اس کابھرپور مظاہرہ کیا۔

مزید : کھیل

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...