ملاکنڈ،ایریگیشن میں بھرتیاں خالصتاً میرٹ پر ہوئیں،آفتاب خان

ملاکنڈ،ایریگیشن میں بھرتیاں خالصتاً میرٹ پر ہوئیں،آفتاب خان

سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان)محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ کے ایکسین آفتاب خان نے کہا ہے کہ ایریگیشن ملاکنڈ میں ہو نے والے بھرتیاں خالصتأئ میرٹ کے بنیاد پر ہوئے ہیں۔محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ کے چند آفراد غیر قانونی بھرتیاں کروانے اور ذاتی فوائد حاصل کرنے کے لئے دباؤ ڈال رہے ہیں اور میرے انکار پر میڈیا ٹرائل کی دھمکیاں دے رہے ہیں لیکن ہمارے ہاتھ اقرباء پروری اور کرپشن سے پاک ہیں اور کسی کے بلیک میلنگ میں نہیں آئینگے۔محکمے کے جاں بحق آفراد کے بچوں اور معذوروں کے لئے مختص کوٹے میں انہیں پورا حق دیا ہے۔ میرے خلاف الزامات لگانے والوں نے بھرتیوں کے لئے لوگوں سے پیسے لئے ہیں جن کے خلاف محکمہ انٹی کرپشن میں انکوائری ہورہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کیا۔ آفتاب خان نے کہا کہ کسی سیاسی قائد یا ایم پی اے ایم این اے نے غیر قانونی کام کرنے کے لئے نہیں کہا اور نہ میں نے کبھی سیاسی آثر رسوخ پر کام کیا ہے بلکہ حق دار تک ان کا حق پہنچانے کی حتی الوسع کوشش کی ہے اور اگر میرٹ پر بھرتی کرنا گنا ہے تو پھر میں نے یہ گنا ہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ معذور آفراد کے لئے مختص کوٹہ چار بنتا ہے لیکن ہم نے قانونی تقاضے پورے کرتے ہوئے چھ آفراد بھرتی کئے ہیں اور مختص کوٹہ میں مذید بھی بھرتی کرینگے۔ اقلیت کے لئے مخصوص پوسٹوں پر بھی اقلیت بھرتی ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں ایمانداری سے اپنی ڈیوٹی نبھا رہا ہوں اور تا حال حکومت بھی میری کارکردگی اور کردار سے مطمئن ہیں کیونکہ اسی طرح ماضی میں بھی غلط الزامات لگنے کے واقعات میں انکوائری کمیٹی نے بھی مجھے کلیئر قراردیا تھا۔ آفتاب خان نے کہا کہ جن جن علاقوں میں ضرورت ہوتی ہے وہاں کے اسکیموں کے لئے پی سی ون تیار کی جاتی ہے اور بغیر ضرورت کے اسکمیں تیار نہیں کرتے تاکہ خزانے پر بے جا بوجھ نہ بن جائے اس لئے درگئی بازار کے نہر صفائی کے لئے پی سی ون تیار نہیں کی تھی کیونکہ درگئی بازار نہر میں بازار کے دکاندار گندگی ڈالتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میرے خلاف پریس کانفرنس میں کسی قسم کی حقیقت نہیں ہے بلکہ یہ صرف اور صرف مجھے بلیک میل کرکے من پسند لوگ بھرتی کروانے اور غیر قانونی کام نکلوانے کی ناکام کوشش ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر