حکومت اپوزیشن سے ڈر گئی ‘ نیب کے ذریعے گرفتاریاں غلط فیصلہ‘ احمد محمود

حکومت اپوزیشن سے ڈر گئی ‘ نیب کے ذریعے گرفتاریاں غلط فیصلہ‘ احمد محمود

ملتان(نیوز رپورٹر) پاکستان پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے صدر و سابق گورنر پنجاب مخدوم سید احمد محمود نے پارٹی کی فیڈرل کونسل کے رکن عبدالقادرشاھین کے ہمراہ وفاقی حکومت کے ظالمانہ بجٹ اپوزیشن رہنماوں کی نیب کے زریعیے انتقامی گرفتاریوں پر میڈیا نمائیندوں سے گفتگو کے (بقیہ نمبر47صفحہ7پر )

دوران سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ ائی ایم ایف کے بجٹ کو اپوزیشن پارٹیوں ہی نہیں بلکہ پوری قوم نے مسترد کر دیا ہے۔ سلیکٹڈ سرکار اپوزیشن سے ڈرگئی۔ قائدین پر جھوٹے مقدمات کی کوئی حیثیت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ نیب متنازعہ ادارہ بن چکا اپوزیشن اور پیپلز پارٹی رہنماوں کیخلاف یکطرفہ کارروائیاں ناکام بجٹ سے توجہ ہٹانے کیلئے ہیں۔ نیب زدہ وزراءعمران نیازی کی گود میں پناہ لئے ہوئے ہیں۔ قوم جاننا چاہتی ہے کہ علیمہ خان فیصل واوڈا فردوس عاشق اعوان اور پرویز خٹک نے اٹاثے باہر کیسے بھیجے۔ انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کے تجویز کردہ بجٹ کے نفاذ کا خوف درست ثابت ہوچکا، غیر سنجیدہ حکومت ملکی سلامتی کیلئے خطرہ بنتی جارہی ہے۔ 105 ارب کے اضافی ٹیکس آئی ایم ایف کی ظالمانہ شرائط پر عملدرآمد کا نتیجہ ہے۔ جو انتہائی غیر متوازن اور غیر سنجیدہ ہے۔ مینڈیٹ چور حکومت نے بجٹ آئی ایم ایف کے سپرد کر دیا۔انہوں نے کہا کہ کٹھ پتلی حکومت حق حکمرانی کھوچکی ہے، بجٹ سے توجہ ہٹانے کیلئے پہلے احتساب کے نام پر اپوزیشن راہنماو¿ں کو گرفتار کیا گیا، بے بس عوام پر ٹیکسوں کا سونامی لادنے پر انتہائی تشویش ہے، یہ بالکل واضح ہے کہ ٹیکسوں کی بھرمار کی وجہ سے کاروباری ادارے اپنی تجارت نہیں کرسکتے، ٹیکسوں کی بھرمار کی وجہ سے مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ ہوگا۔

احمد محمود

مزید : ملتان صفحہ آخر