مختاراں مائی کیس،ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست خارج

مختاراں مائی کیس،ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست خارج
مختاراں مائی کیس،ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست خارج

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے مختاراں مائی کیس میں ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست خارج کردی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں مختاران مائی کیس میں ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست کی سماعت ہوئی،مختاراں مائی نے ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست دائرکی تھی،جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی،عدالت نے کہا کہ اٹھائے گئے نکات کوکسی دوسرے کیس میں زیرغورلائیں گے،اپیل میں اٹھائے گئے نکات نظرثانی میں نہیں لیے جاسکتے،جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ نظرثانی میں صرف فیصلے کی غلطی کابتایاجاتا ہے،کیس کومختصر کریں ورنہ 10 سال ایسے ہی پڑارہے گا،وکیل ملزمان نے کہا کہ فیصلے میں لکھاگیامختاراں مائی کے جسم پرزخم کاکوئی نشان نہیں،اعتزاز احسن نے کہا کہ ریکارڈ سے بتاوں گاجسم پرزخم کے نشان تھے،عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد مختاراں مائی کی ملزمان کی بریت کیخلاف نظرثانی درخواست خارج کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد