آصف زرداری کیخلاف نیب متحرک ، سابق صدر کیلئے پریشان کن خبرآگئی

آصف زرداری کیخلاف نیب متحرک ، سابق صدر کیلئے پریشان کن خبرآگئی
آصف زرداری کیخلاف نیب متحرک ، سابق صدر کیلئے پریشان کن خبرآگئی

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) اسلام آباد ہائی کورٹ کے ڈویڑن بنچ نے پارک لین کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کی درخواست ضمانت کی سماعت 17 جون تک ملتوی کر دی ہے۔

روزنامہ نوائے وقت کے مطابق گزشتہ روز عدالت عالیہ اسلام آباد کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویڑن بنچ نے جعلی بنک اکاونٹس پارک لین کیس میں سابق صدر کی درخواست ضمانت کی سماعت کی۔ اس موقع پر آصف علی زرداری کی جانب سے فارو ق ایچ نائیک عدالت میں پیش ہوئے اور موقف اختیار کیا کہ آصف زردای سے ہدایات لینا تھیں لیکن ان کو لایا ہی نہیں گیا ، آصف زرداری کی عدالت میں موجودگی ضروری ہے۔ انہوں نے فاضل عدالت سے استدعا کی کہ آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کئے جائیں۔ اس پر جسٹس عامرفاروق نے کہاکہ آصف زرداری گرفتار ہو چکے ہیں ، کیا ریاست انہیں عدالت پیش کرنے کی پابند ہے۔ اس پر فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ اگر عدالت آرڈر جاری کرے تو پیش کیا جا سکتا ہے۔

اس موقع پر نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ آصف علی زرداری جوڈیشل لاک اپ میں نہیں بلکہ جسمانی ریمانڈ پر ہیں ، جسمانی ریمانڈ سے ہم ایسے ہی انہیں عدالت نہیں لا سکتے ، اگر عدالت پروڈکشن آرڈر جاری کرے تب ہی انہیں عدالت میں پیش کر سکتے ہیں۔ اس پرعدالت نے فاروق ایچ نائیک کو الگ درخواست دائر کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری کو استثنیٰ دلوانے یا پروڈکشن آرڈر جاری کروانے کے لئے الگ درخوست دائر کریں۔ فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ میں کل تک الگ درخواست دائر کر دوں گا۔ اس پر فاضل عدالت نے کیس کی مزید سماعت 17 جون تک ملتوی کر دی۔قومی احتساب بیورو( نیب )نے سابق صدر آصف زرداری کے خلاف ایک اور ریفرنس تیار کرلیاہے۔

اخباری ذرائع کے مطابق آصف زرداری کیخلاف پارک لین اینڈ پیراتھینن کمپنی کا ضمنی ریفرنس تیار کرلیا گیا ہے اور نیب ایگزیکٹو بورڈ 48گھنٹوں میں ضمنی ریفرنس کی منظوری دے گا۔ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب کی زیر صدارت ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس آج منعقد ہونے کا امکان ہے۔جس میں ریفرنس دائر کرنے کی منظوری لی جائے گی اور ممکنہ طور پر آئندہ ہفتے یہ ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کر دیا جائے گا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد